میں دنیا کے سامنے آج نشان عبرت کی طرح ہوں، صولت مرزا -
The news is by your side.

Advertisement

میں دنیا کے سامنے آج نشان عبرت کی طرح ہوں، صولت مرزا

کراچی : ٹارگٹ کلنگ کے جرم میں سزائے موت کے منتظرصولت مرزا نے کہا ہے کہ میں آج نشان عبرت ہوں کل تک میں ایم کیو ایم کا کارکن تھا۔

پھانسی سے چند دن قبل صولت مرزا نے دیئے گئے ویڈیو بیان میں کہا کہ میں دنیا کے سامنے آج نشان عبرت کی طرح ہوں، جو مشہور ہوتا ہے اسے راستے سے ہٹا دیا جاتا ہے، مجھے فیلمی کا ڈر ہے میری فیلمی کا کوئی بھی شخص ایم کیو ایم میں نہیں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جو کارکن پکڑے جاتے ہیں ان سے لاتعلقی کا اظہار کردیا جاتا ہے، کارکنان سے اپیل ہے کہ اپنی آنکھیں کھولیں، ہوش کریں ورنہ پچھتاوے کے سوا کچھ نہ ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ میری پھانسی ملتوی کی جائے اور مجھے میری غلطیوں کے ازلالے کا وقت دیا جائے۔

صولت مرزا کا کہنا ہے کہ ہم سے کام کروایا گیا، الطاف حسین بابرغوری کے ذریعے ہدایت دیا کرتے تھے، بابرغوری کے گھر پرہم چار لوگوں بلایا گیا تھا۔

انہوں نے انکشاف کیا کہ مصطفی کمال کو ذلیل کرواکے نکالا گیا۔ عظیم احمد طارق کو بھی الطاف حسین کے کہنے پرقتل کروایا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی کی حکومت نے مجھ سے تعاون کیا، جبکہ ایم کیو ایم نے کام نکل جانے کے بعد مجھے ٹیشو پیپر کی طرح پھینک دیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں