site
stats
پاکستان

نئےصوبےبنانےکےمطالبےسےدستبردارنہیں ہوں گے، خالد مقبول صدیقی

حیدرآباد: متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے ڈپٹی کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ ملک میں نئے صوبے بنانے کا مطالبہ آئینی ہے جس سے کسی صورت دستبردار نہیں ہونگے۔

حیدرآباد کے علاقے لطیف آباد میں ایم کیو ایم کے رکنیت سازی کیمپ کے دورے کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے مزید کہا کہ آئین میں صوبے بنانے کی گنجائش موجود ہے، اس کے طریقہ کار پر اختلاف ہوسکتا ہے، جبکہ صوبے بنانے کا مطالبہ آئینی ہے اور اس مطالبے سے کسی صورت دستبردار نہیں ہونگے۔

انہوں نے کہا کہ آہستہ آہستہ ملک بھر میں لوگ نئے صوبے بنانے کے مطالبے کی طرف آرہے ہیں، ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا کہ جو لوگ صوبے کے مطالبے کو غداری سمجھ رہے ہیں وہ اپنے رویے پر غور کریں کیونکہ صوبہ کوئی ملک نہیں بلکہ انتظامی یونٹ ہوتا ہے۔

ایم کیو ایم رکنیت سازی مہم کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ ملک بھر میں ایم کیو ایم کی رکنیت سازی کی مہم زوروشور سے جاری ہے اور لوگ جوق درجوق ایم کیو ایم میں شمولیت اختیار کررہے ہیں، انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم ایک پروگریسو اور لبرل جماعت ہے ، بہت سے جماعتیں اپنے لبرل ہونے کا دعویٰ کرتی ہیں لیکن ان کی سیاست موروثی طریقے سے آگے بڑھ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے مسائل کا حل عام آدمی کے ہاتھ میں ہے، ہم ایسے نوجوانوں کو ایوانوں میں بھیج رہے ہیں جو عوام کے مسائل کو سمجھتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top