site
stats
پاکستان

نائن زیرو سے گرفتار ملزمان کے اہل خانہ کی ملاقات کی درخواست مسترد

کراچی :انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو سے گرفتار کیے گئے ملزمان کے اہل خانہ کی ملزمان سے ملاقات کی درخواست مسترد کردی۔

انسدادِ دہشت گردی کی عدالت میں نائین زیرو سے گرفتار کیے فیصل موٹا فرحان شبیر اور دیگر چھبیس کے اہل خانہ نے درخواست دائر کی تھی کہ ان کی ملزمان سے ملاقات کروائی جائے۔

اس درخواست کے جواب میں رینجرز حکام کا کہنا تھا کہ ملزمان انتہائی سنگین جرائم میں ملوث ہیں اور ان سے تفتیش کی جارہی ہے، دوران تفتیش ان ملزمان کی ملاقات مناسب نہیں ہوگی۔

عدالت نے فریقین کے دلائل کے بعد درخواست مسترد کردی۔

واضح رہے کہ ایم کیوایم کے مرکز نائن زیرو میں جرائم پیشہ افراد کی موجودگی کی اطلاع پر رینجرزنے سرچ آپریشن کیا، آپریشن کے دوران عامرخان سمیت کئی کارکنوں کوتحویل میں لے لیا گیا جبکہ غیرملکی اسلحہ بھی برآمد ہوا۔

ایم کیوایم کے مرکز سے ملحقہ خورشید بیگم میموریل ہال بھی کورینجرز چھاپے کے بعد عارضی طورپرسیل کردیا گیا تھا، رینجرز نےدعوٰی کیا ہے کہ نائن زیرو سےنیٹوسپلائی سے چرایا گیا اسلحہ بھی ملا ہے۔

ایم کیو ایم کے مرکز نائن زیرو پر چھاپے کے دوران گرفتار کئے گئے 32ملزمان کو90 روزہ ریمانڈ پر رینجرز کے حوالے  کردیا گیا جبکہ فیصل موٹا اور عبید کے ٹو سمیت 26ملزمان کو14روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

ملزمان میں صحافی ولی خان بابرکے قتل میں ملوث فیصل موٹا ، عبید کے ٹو اور نادر بھی شامل ہے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل رابطہ کمیٹی کے ممبراور سینئر رہنماء عامرخان سمیت 27 ملزمان کو 90 روزہ ریمانڈ پر رینجرز کے حوالے کیا گیا تھا جبکہ گرفتار کیے گئے 3افراد کو تفتیش کے بعد رہا کر دیا گیا، رہائی پانے والوں میں پرویز، عظیم اور خرم  شامل ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top