The news is by your side.

Advertisement

نلترہیلی کاپٹرحادثہ: پاکستانی طالبان نے ذمہ داری قبول کرلی

گلگت: پاکستانی طالبان نے پاک فوج کے ایم آئی 17 ہیلی کاپٹر کو گرانے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے سانحے میں دو پائلٹس اور چھ غیر ملکی جاں بحق ہوئے ہیں طالبان کا کہنا ہے کہ ان کا نشانہ وزیراعظم نواز شریف تھے۔

اس واقعے کا اعتراف تحریک طالبان کے ترجمان محمد خراسانی کی جانب سے اردو زبان میں بھیجی گئی ای میل میں کیا گیا اور کہا گیا ہے کہ ’’ ہیلی کاپٹر کو اینٹی ایئر کرافٹ میزائل سے نشانہ بنایا گیا ہے‘‘۔


گلگت میں آرمی کے ہیلی کاپٹر کی کریش لینڈنگ، آٹھ جاں بحق


 آئی ایس پی آر کے ترجمان میجر جنرل عاصم سلیم باجوہ کے مطابق حادثے دو پائلٹس اور چیف انجینئر شہید جبکہ 6 غیرملکی افراد جاں بحق ہوئے ہیں جن میں ناروے کے سفیر،فلپائن کےسفیر اور ان کی اہلیہ اور ملائشیا اور انڈونیشیا کے سفیروں کی بیگمات شامل ہیں۔ حادثے میں پولینڈ اورہالینڈ کے سفیروں سمیت 13 افراد زخمی ہوئے ہیں۔

حادثہ فنی خرابی کے سبب ہوا، آئی ایس پی آر

طالبان کی جانب سے کئے گئے اس دعوے کی تاحال تصدیق نہیں کی جاسکی ہے واضح رہے کہ گلگت بلتستان پر مشتمل پاکستان کا شمالی علاقہ جہاں ہیلی کاپٹر کو نشانہ بنایاگیا وہاں طالبان کا اثر ورسوغ اس طرح نہیں ہے کہ وہ ایسی کوئی منظم کاروائی کرسکیں۔

اس بیان سے قبل وزیراعظم ہاؤس سے جاری کردہ بیان کے مطابق حادثے کے وقت وزیراعظم کا جہازگلگت کی جانب رواں دواں تھا لیکن کریش کی اطلاع ملتے ہی جہازکا رخ واپس اسلام آباد کی جانب موڑ لیا گیا تھا۔

دوسری جانب وزارت دفاع کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ اورآئی ایس پی آر کی جانب سے جاری کردہ بیان کے مطابق ہیلی کاپٹر کو حادثہ فنی خرابی کی بناء پرلینڈنگ کے دوران پیش آیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں