نواز شریف کو نااہل قرار دینے کی پیپلز پارٹی کی درخواست بھی التوا کا شکار -
The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کو نااہل قرار دینے کی پیپلز پارٹی کی درخواست بھی التوا کا شکار

اسلام آباد: وزیراعظم نواز شریف کو نااہل قرار دینے کی پیپلز پارٹی کی درخواست بھی التوا کا شکار ہوگئی، الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ ہمارے ارکان کی تقرری تک درخواستوں پر کوئی کارروائی نہیں ہوسکتی۔

تفصیلات کے مطابق سیکریٹری الیکشن کمیشن بابریعقوب نے وزیراعظم کے خلاف ریفرنسز موصول ہونے کی تصدیق کردی،ساتھ ہی پاکستان تحریک انصاف کے بعد الیکشن کمیشن نے پیپلز پارٹی کو بھی انتظار کرنے کی ہدایت کردی۔

ان کا کہنا تھا کہ چیف الیکشن کمشنر اکیلے کسی درخواست کی شنوائی نہیں کرسکتے،کمیشن مکمل ہونے پرزیرالتوا کیسزکھولیں جائیں گے، الیکشن کمیشن کے ممبران کی تقرری تک کسی کو بھی نااہل قرار دینے کی درخواستیں التوا کا شکار رہیں گی۔

سیکریٹری الیکشن کمیشن کا کہنا تھا صوبائی مبمران کےنہ ہونے سےخلا پیدا ہوا،حکومت کوممبران کی تعیناتی کےلئےخط لکھ دیا ہے، نااہلی کی تمام درخواستوں کو علیحدہ کرکے رکھ دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ پی ٹی آئی کے بعد پیپلزپارٹی نے بھی الیکشن کمیشن میں وزیر اعظم اور ان کے چار رشتے داروں کے خلاف نااہلی ریفرنس دائر کی ۔

یپلز پارٹی کے رہنمالطیف کھوسہ کاکہنا تھا کہ وزیر اعظم نواز شریف وزیر اعلی پنجاب شہبازشریف، وزیرخزانہ اسحاق ڈار اور اراکین قومی اسمبلی اور وزیر اعظم کے داماد کیپٹن صفدراور شہباز شریف کے بیٹے شریف کی حمزہ شہباز کے خلاف ریفرنس دائر کیا ۔

لطیف کھو سہ نے کہا تھا کہ یہ پانچوں افرادآئین کےآرٹیکل باسٹھ اور تریسٹھ پرپورانہیں اترتے، الیکشن کمیشن میں پیپلز پارٹی کی جانب سے دائر ریفرنس ایک ہزارصفحات پرمشتمل ہے جس میں ثبوت کےطورپر ان کے متضاد بیانات کو شامل کیا گیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں