The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم سمیت11افراد پر ایف آئی آر کا حکم معطل

اسلام آباد : وزیرِاعظم سمیت گیارہ افراد پر ایف آئی آر کاٹنے کا حکم اسلام آباد ہائی کورٹ نے معطل کردیا ہے، شاہراہ دستور پر دھرنے کے شرکاء کے قتل کا الزام تھا، پی اے ٹی کی درخواست پر سیشن جج کے حکم پر مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے شاہراہ دستور پر واقع پر ایف آئی آر سے نام خارج کرنے کی آئی جی اسلام آباد کی درخواست پر کیس کی سماعت کی۔

سماعت کے دوران جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے پاکستان عوامی تحریک کی جانب سے وزیرِاعظم سمیت گیارہ افراد کیخلاف ایف آئی آر کے آرڈر معطل کردیئے۔

اسلام آباد کی سیشن کورٹ کے حکم پر پاکستان عوامی تحریک کے دھرنے کے شرکاء کے قتل پر وزیرِاعظم نواز شریف سمیت گیارہ افراد کیخلاف قتل اور اقدامِ قتل کا مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ 30 اگست کی رات ڈاکٹر طاہر القادری اور عمران خان نے کارکنوں کو وزیرِاعظم ہاؤس کی جانب مارچ کی ہدایت کی تھی، جس کے بعد پولیس اور مظاہرین میں جھڑپوں میں 3 افراد جاں بحق جبکہ 200 سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں