The news is by your side.

Advertisement

وزیرِاعظم لیاقت علی خان کا قتل، امریکی سی آئی اے نے افغانستان کی مدد سے کرایا تھا

واشنگٹن :امریکی محکمہ خارجہ نے انکشاف کیا ہے کہ پاکستان کے پہلے منتخب وزیر اعظم لیاقت علی خان کا قتل امریکی سی آئی اے نے افغانستان کی مدد سے کرایا تھا۔

امریکی محکمہ خارجہ کی جانب سے عام کی جانے والی انتہائی خفیہ معلومات میں بتایا گیا ہے کہ امریکی صدر ہیری ٹرومین نے ایران میں تیل کے کنوؤں پر امریکی اجارہ داری قائم کرنے میں مدد نہ دینے اور اسے ایران کا داخلی معاملہ قرار دینے کے ساتھ ساتھ پاکستان میں امریکی فوجی اڈے خالی کرنے کے مطالبے پر شہید ملت خان لیاقت علی خاں کے قتل کا منصوبہ بنایا لیکن اسے پاکستان میں کوئی ایسا شخص نہ ملا جو قائد ملت پر گولی چلا سکتا۔

جس کے بعد کابل میں امریکی سفارتخانے نے افغانستان کے بادشاہ ظاہر شاہ کو اس کام کیلئے راضی کیا اور لیاقت علی خان کی شہادت کے بدلے اسے پختونستان کے قیام میں مدد کا لالچ دیا۔

افغان حکام نے سید اکبر کو ایسی پستول دی، جو نہایت اعلی عہدوں پر فائز امریکیوں کو دی جاتی تھی، سید اکبر نے جب شہید ملت کو نشانہ بنایا تو ہجوم میں موجود دو افراد نے ثبوت ختم کرنے کیلئے سید اکبر کو موت کے گھاٹ اتار دیا ، مزید احتیاط کے طور پر ان دو افراد کو بھی موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں