site
stats
اہم ترین

وزیرِاعظم کی محصورین کو جلد واپس لانے کی ہدایت

اسلام آباد: وزیرِاعظم کی زیرِ صدارت اعلی سطح اجلاس میں وزیرِاعظم نے مشرقی وسطی کی صورتحال پر غور کے لیے وفد آج سعودی عرب بھیجنے کا فیصلہ کیا۔

 یمن کی صورتحال کے پُرامن حل، سعودی عرب کولاحق خطرات سے نمٹنے اور محصور پاکستانیوں کی بحفاظت واپسی کیسے ہو، وزیرِاعظم نوازشریف اعلی سطح کے اجلاس میں سرجوڑکر بیٹھ گئے۔

اجلاس میں مشرقی وسطی کی صورتحال اور یمن سے پاکستانیوں کی انخلاء کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا، ۔وزیراعظم نوازشریف نے پہلے مرحلے میں پاکستانیوں کی وطن واپسی کے اقدامات پراطمینان کا اظہارکیا اور محصور پاکستانیوں کی جلد وطن واپسی کیلئے اقدامات کی ہدایت کی۔

 اجلاس میں وزیرِخزانہ اسحاق ڈار، وزیرِدفاع خواجہ آصف، وزیرِاعظم کے مشیر سرتاج عزیز، طارق فاطمی اور دیگر حکام نے شرکت کی۔

گزشتہ روز پاکستان نے یمن کے معاملے میں بین الاقوامی برادری، اقوام متحدہ اور او آئی سی سے کردار ادا کرنے کا مطالبہ کیا ، وزیرِاعظم نواز شریف کی زیرِصدارت اجلاس میں اس عزم کو دہرایا گیا کہ سعودی عرب کی سلامتی اور جغرافیائی وحدت کا ہر صورت دفاع کیا جائے گا۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ پاکستان مشرق وسطی کی بگڑتی ہوئی صورتحال میں ایک بامقصد کردار ادا کرنے کے ساتھ بحران کے جلد حل اور مسلم امہ میں امن و اتحاد کو فروغ دینے کے لیے کوشاں ہے۔

اس مقصد کے لیے وزیرِاعظم برادر اسلامی ملکوں کے ساتھ رابطے میں ہیں۔

اجلاس میں پاکستان نے اقوام متحدہ، او آئی سی اور بین الاقوامی برادری سے بحران کے سیاسی حل کے لیے تعمیری کردار کرنے کی اپیل کی۔

اجلاس میں وزیرِخزانہ اسحاق ڈار، وزیرِدفاع خواجہ آصف، وزیرِاعظم کے مشیر سرتاج عزیز، چیف آف آرمی اسٹاف جنرل راحیل شریف، چیف آف ائر اسٹاف ائرچیف مارشل سہیل امان ، وائس ایڈمرل ہشام بن صدیق اور سیکریٹری خارجہ سمیت اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top