site
stats
اہم ترین

وزیر اعظم کا اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی میں خطاب

نیویارک: وزیرِ اعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ کشمیر کے مسئلے پرپردہ نہیں ڈال سکتے، انہیں نے بھارت کی سلامتی کونسل میں ممکنہ شمولیت پر تحفظات کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ کوئی نیا مستقل ممبر نہیں بننا چاہئیے۔

اسلامی جمہوریہ پاکستان کے وزیرِاعظم نواز شریف نیویارک میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں خطاب کررہے تھے اوران کا کہنا تھا کہ سیکریٹری خارجہ کی سطح پر بھارت سے مذاکرات کے خاتے پرافسوس ہوا، کشمیری عوام بنیادی حقوق سے محروم ہیں اورایک عرصے سے تنازعے کے حل کا انتظارکررہے ہیں ہم اس پر پردہ نہیں ڈال سکتے۔

انہوں نے فلسطین کے مسئلے پر فلسطینی عوام کی نسل کشی کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اسرائیل نےغزہ میں بربریت کا مظاہرہ کیا عالمی برادری کو چاہئے کہ فلسطینیوں پرہونے والے مظالم روکے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم پا کستان کو اپنے بانی قائد اعظم محمد علی جناح کی خواہش کے مطابق ایک فلاحی مملکت بنانا چاہتے ہیں۔

ان کاکہنا تھا کہ ہم ایک طویل عرصے سے دہشت گردی کا شکار ہیں اور ہماری افواج دہشت گردی کے خلاف ایک فیصلہ کن جنگ لڑرہی ہیں اور پاکستان کی عوام فوج کی پشت پرہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم ایک ایٹمی طاقت ہیں اوراپنی ذمہ داریوں سے بخوبی واقف ہیں ہم نے نیوکلیئر سیکیورٹی کے جدید ترین انتظامات کررکھے ہیں، اور ہم خطے میں اسلحہ کی کسی دوڑ کا حصہ نہیں ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی کونسل میں کوئی نیا مستقل ممبر نہیں ہونا چاہئے، انہوں نے بلواسطہ بھارت کے سیکیورٹی کونسل میں مستقل ممبر بننے کے امکان پر تحفظات کا اظہارکیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top