The news is by your side.

Advertisement

وفاقی حکومت اورخیبر پختونخواہ کے درمیان مذاکرات کامیاب

اسلام آباد :وزیرِاعلیٰ خیبرپختونخواہ پرویزخٹک اوروفاقی وزیربرائے بجلی و پانی خواجہ آصف کے درمیان مذاکرات کامیابی سے ہمکنارہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق منگل کے روز وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ پرویزخٹک کی قیادت میں حکومت اورحزبِ اختلاف کے ارکان نےخیبرپختونخواہ ہاوٗس سے پیدل مارچ کیا اورریڈ زون سے ہوتے ہوئے پارلیمنٹ ہاؤس کے سامنے پہنچے تھے اوراپنے مطالبات کی منظوری کے لئے دھرنا دیا۔


خیبرپختونخواہ ارکانِ اسمبلی کا پارلیمنٹ کے سامنے دھرنا


اس موقع پروفاقی وزیرخواجہ آصف خود پارلیمنٹ کے دروازے پرتشریف لائےاورپرویزخٹک کو اندرلے جاکران کے مطالبات سنے اورکچھ دیرجاری رہنے والے مذاکرات کے بعد کے پی کے حکومت کے تمام ترمطالبات تسلیم کرلئے گئے۔

مطالبات کے بعد دونوں رہنماؤں نے میڈیا سے مشترکہ گفتگو کی جس میں پرویزخٹک کا کہنا تھا کہ ’’ہمارے تین بڑے مسائل ہیں لوڈ شیڈنگ، گوادرکاشغرروٹ اور ہائیڈل منصوبوں فنانس منسٹری سے منظوری ہے‘‘۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ’’مذاکرات کامیاب ہوچکے ہیں اورمسائل کا حل تقریباً نکل چکا ہے، جمعے کو خیبر پخونخواہ حکومت اور وفاقی حکومت کے درمیان ہونے والی میٹنگ میں صورتحال واضح ہوجائے گی‘‘۔

اس موقع پرمیڈٰیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ لوڈشیدنگ اورہائیڈل منصوبوں سے متعلقہ تمام مسائل دوماہ قبل ہی وفاقی وزراء کی میٹنگ میں حل کئے جاچکے ہیں اب صرف حکومتی نوٹیفیکیشن جاری ہونا ہے۔

گوادرکاشغرروٹ سے متعلق خیبرپختونخواہ کے خدشات پران کا کہنا تھا کہ اس سلسلے میں وزیر اعظم نے پہلے ہی پارلیمانی لیڈرز کی میٹنگ طؒب کی ہوئی ہے جوکہ کل ہونی ہے۔ میٹنگ میں تمام پارلیمانی جماوعتوں کے تحفظات پرگفتگو ہوگی اور چھوٹے صوبوں کے خدشات دور کئے جائیں گے۔

اس موقع پر جماعت اسلامی کے سربراہ سراج الحق کا کہنا تھا کہ آج خیبرپختونخواہ کی تمام نمائندہ قوتوں نے پرویزخٹک کی قیادت میں حکومت سے مطالبات منظورکرائے ہیں یہ ایک خوش آئند بات ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں