وفاقی وزیرصنعت و پیداوار سے بوسنیائی سفیر کی ملاقات -
The news is by your side.

Advertisement

وفاقی وزیرصنعت و پیداوار سے بوسنیائی سفیر کی ملاقات

وفاقی وزیرصنعت اور پیداوارغلام مرتضیٰ جتوئی نے بوسنیا کے ساتھ تجارتی تعلقات اور تعاون میں بتدریج اضافے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی سرمایہ کاراپنے برادر مسلم ملک بوسنیا کی صنعتی بنیاد بنانے کیلئے سرمایہ کاری کریں۔

پاکستان میں متعین بوسنیا کے سفیر نیدم میکاروچ سے ایک ملاقات کے دوران انہوں نے کہا کہ پاکستان بوسنیا کو اپنی ٹیکسٹائل اور چمڑے کی مصنوعات کی برآمدات میں اضافہ کرے گااور بوسنیائی سرمایہ کاروں کو مختلف صنعتی شعبوں میں تکنیکی مہارت بھی فراہم کرے گا۔

جبکہ حکومت پاکستان، چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کو بوسنیا میں موجود سرمایہ کاری کے مواقعوں کی تفصیلات فراہم کرے گی، وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت سرمایہ کاروں کے تمام خدشات دور کر رہی ہے، سرمایہ کاروں کے اولین خدشات امن و امان کا مسئلہ اور توانائی کی کمی ہیں ، جن کو حکومت ترجیحی بنیادوں پر حل کر رہی ہے ۔

ملاقات کے دوران بوسنیائی سفیر نے بتایا کہ بوسنیا پورے یورپ کو کنفکشنری مہیا کرتا ہے ، بوسنیاپن بجلی اور کوئلے سے پیدا شدہ بجلی کے منصوبوں میں مہارت رکھتا ہے ، پاکستان کے توانائی کے مسلئے میں پاکستان کو تکنیکی مہارت فراہم کر سکتے ہیں۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں