The news is by your side.

Advertisement

این اے 122:عمران خان میدان چھوڑ کربھاگ گئے ہیں، حمزہ شہباز

لاہور: مسلم لیگ ن نے این اے 122 کی انتخابی مہم کے سلسلے میں سمن آباد میں آخری جلسے کا انعقاد کیا جس سے خطاب کرتے ہوئے حمزہ شہباز کا کہنا تھا کہ عمران خان ایاز صادق کے مقابلے میں میدان چھوڑ کربھاگ گئے ہیں۔

پاکستان مسلم لیگ ن نے این اے 122 کے علاقے سمن آباد کے ڈونگی گراوٗنڈ میں آج سیاسی قوت کا مظاہرہ کیا جلسے سے خواجہ سعد رفیق، ایازصادق اور حمزہ شہباز نے خطاب کیا۔

حمزہ شہبازکا خطاب


پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنماء حمزہ شہباز کا کہنا ہے ایازصادق دوبارہ میدان میں اترے ہیں لیکن عمران خان میدان چھوڑکربھاگ گئے، ایاز صادق کی نگاہیں عمران خان کو ڈھونڈ رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ این اے 122 کےمعرکے میں جذبے کی جیت اورقبضے کی ہارہوگی۔

حمزہ شہباز کا کہنا تھا کہ جب ججز کی بحالی کے لئے نکلے توان کے والد نواز شریف کی جان کو شدید خطرات لاحق تھے لیکن وہ میدان چھوڑ کرنہیں گئے، اس وقت عمران خان کہاں غائب تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ میاں نواز شریف کی قیادت میں ملک میں دہشت گردوں کے خلاف کاروائی جاری ہے جبکہ عمران خان پاکستان میں طالبان کا دفتر کھلواناچاہتے تھے، عمران خان ان ماوٰٗں کو کیا جواب دیں گے جن کے بچے مارے گئے۔

حمزہ شہباز نے انکشاف کیا کہ سابق صدر پرویزمشرف نے آٹھ سال تفتیش کے بعد انہیں بلا کرکہا کہ نیب میاں برادران کے خلاف کرپشن کا کوئی کیس ثابت نہیں کرپائی۔

حانہوں نے کہا کہ عمران خان شہر بند کراتے ہیں دھرنے دیتے ہیں جبکہ نواز شریف کراچی میں امن قائم کررہے ہیں۔

ایازصادق کاخطاب


حلقہ این اے 122میں مسلم لیگ ن کے امیدوارسابق اسپیکرقومی اسمبلی ایازصادق نے مسلم لیگ ن کے حامیوں سےخطاب کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کا مسئلہ این اے 122 نہیں بلکہ وزیراعظم نہ بن پانا ہے۔

سردارایاز صادق نے یہ بھی کہا کہ پاکستان کے عوام اب عمران خان کے جھوٹے جھانسوں میں نہیں آئیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ کی کوششوں سے آج ملک میں امن قائم ہورہا ہے جوعمران خان کو پسند نہیں آرہا۔

سعد رفیق کا خطاب


مسلم لیگ ن کے رہنماء اوروزیرِریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ کوئی مائی کا لعل ’’شیر‘‘ کا مقابلہ نہیں کرسکتا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ عمران خان جھوٹ بولنا چھوڑدیں اوراب بڑے ہو جائیں۔

سعد رفیق کا کہنا تھا کہ نوازشریف نے ملک کو ناقابل تسخیر بنایا، یہ کیسے لیڈر ہیں جو ملک کی خوشحالی کے آگے دھرنا شروع کردیتے ہیں

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں