پاکستان نے اپنی حدود میں آنے والا بھارتی ڈرون مار گرایا ARYNews.tv
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان نے اپنی حدود میں آنے والا بھارتی ڈرون مار گرایا

راولپنڈی: پاک فوج نے پاکستانی حدود میں داخل ہونے والے بھارتی ڈرون کو مار گرایا، ڈرون 60 میٹر تک پاکستانی حدود میں داخل ہوگیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کی جانب سے فائرنگ کے ساتھ ساتھ ایل اوی سی پر جاسوسی کی کوششیں بھی جاری ہیں،آج ہفتے کو بھارتی ڈرون طیارہ کوئیڈ کاپٹر ایل او سی کے دکھ چکری سیکٹر میں 60 میٹر تک پاکستانی حدود میں داخل ہوا جسے پاک فوج کے اہلکاروں  نے مار گرایا۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز لئیق الرحمان نے بتایا کہہ ملبہ پاکستانی حدود میں گرا ہے آئی ایس پی آر نے ڈرون گرانے کی تصدیق کی ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر عاصم باجوہ نے ڈرون گرانے اور ملبہ پاک فوج کے قبضے میں آنے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا ہے کہ ڈرون جلد پاک فوج کے آئی ٹی ڈپارٹمنٹ کے حوالے کیا جائے گا جو اس میں موجود ڈیٹا حاصل کرکے اس کا جائزہ لیا جائے گا۔

لئیق الرحمان نے بتایا کہ یہ شام کا واقعہ ہے جہاں بھارتی جاسوس طیارہ گرایا گیا، طیارہ پاکستانی چوکیوں کی طرف 60 میٹر تک آیا، ڈرون کا مقصد چوکیوں کی جگہ اور اطراف کی تصاویر اور ویڈیو حاصل کرنا تھا، ڈرون کو ایل او سی پر موجود آگاہی دینے والے نے گرایا۔

لئیق الرحمان نے بتایا کہ ایل او سی پر پاک فوج کی جانب سے اینٹی ایئرکرافٹ گنز نصب کی گئی ہیں ان کی مدد سے ڈرون گرایا گیا۔

یہ پڑھیں: بھارتی فوج کی بلا اشتعال فائرنگ،4 بچے شہید

واضح رہے کہ آج ہی کے دن یہ تیسرا واقعہ ہے، قبل ازیں ایل او سی پر فائرنگ کی گئی جس کے نتیجے میں 4 افراد جاں بحق ہوئے،  سمندری حدود کی خلاف ورزی کی گئی جس میں متعدد بھارتی باشندے گرفتار ہوئے اور اب ڈرون طیارے کے ذریعے سرحدی حدود کی خلاف ورزی کی گئی جسے گرادیا گیا۔

ایک روز قبل بھارتی بحریہ کی آبدوز نے پاکستان کے سمندروں میں داخل ہونے کی کوشش کو تاہم پاک بحریہ نے بر وقت ردعمل دیتے ہوئے اسے ناکام بنادیا۔

یہ بھی پڑھیں: پاک بحریہ نے بھارتی آبدوز کو سمندری حدود میں داخل ہونے سے روک دیا

تجزیہ کاروں کے مطابق کواڈ کوپٹر ڈرون کی شکل کا ہی طیارہ ہوتاہے جو کہ سرحد پار فوجی نقل و حرکت کا جائزہ لینے اور جاسوسی کے لیے استعمال کیا جاتاہے، بھارتی فوج کی جانب سے ڈورن بھیجنے کا مقصد پاکستان کے حساس علاقوں کی تصاویر لینا تھا۔

تجزیہ کار امجد شعیب نے کہا کہ ڈرون کا پاکستانی حدود میں موجود ملبہ دنیا کو دکھانے کے لیے واضح ثبوت ہے جس طرح کلبھوشن ایک ثبوت ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں