ٹیکس چوری اور مالی بے ضانطگیاں منی لانڈرنگ میں شامل -
The news is by your side.

Advertisement

ٹیکس چوری اور مالی بے ضانطگیاں منی لانڈرنگ میں شامل

اسلام آباد: وزارت خزانہ نے مالی بے ضابطگیوں اور ٹیکس چوری کو منی لانڈرنگ کے زمرے میں شامل کرنے کا پلان تیار کر لیا ہے۔

اسلام آباد میں سینیٹر نسرین جلیل کی زیر صدرات سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کے جلاس میں سیکریٹری خزانہ وقار مسعود نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ مالی بے ضابظگیوں اور ٹیکس چوری کو منی لانڈرنگ بل میں شامل کیا گیا ہے۔

 انہوں نے مزید بتایا کہ آئی ایم ایف اور عالمی بینک بھی یہی چاہتا ہے کہ ٹیکس چوری اور اسمگلنگ بھی منی لانڈرنگ میں شامل کی جائے۔

 سیکریٹری خزانہ نے بتایا کہ اب تک اینٹی منی لانڈرنگ قانون کے تحت اب تک دو سو ستر افراد کو گرفتار کیا گیا ہے اور دو سو کاوانٹس کو منجمد کیا گیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں