پاکستان نے کینگروز کو 20سال بعد وائٹ واش کردیا -
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان نے کینگروز کو 20سال بعد وائٹ واش کردیا

ابوظہبی: ابوظہبی ٹیسٹ میں پاکستان کی تاریخی فتح حاصل کرلی ، کینگروز کو بیس سال بعد وائٹ واش کردیا ہے۔

کپتان مصباح الحق کے عالمی ریکارڈز کے بعد مایوسی کی انتہا کو پہنچی ہوئی آسٹریلوی بیٹنگ لائن اب پاکستانی بولنگ کے رحم وکرم پر دکھائی دیتی ہے۔
شیخ زید کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے جارہے ٹیسٹ میں پاکستان کیخلاف آسٹریلوی ٹیم شدید مشکلات کا شکار رہی، چھ سو تین رنز کے پہاڑ اگلے کینگروز نے دن کے اختتام پر چار وکٹوں پر ایک سو تینتالیس رنز بنالئے تھے، اس طرح اسے ایک ناقابلِ یقین جیت کے لیے اب بھی 460 رنز درکار ہیں۔

ٹیسٹ میچ آخری روز آسٹریلیا نے 143 رنز 4 رکٹوں کے نقصان پر اپنی دوسری نامکمل اننگز دوبارہ شروع کی۔ مچل مارش اور اسٹیو اسمتھ نے 5ویں وکٹ کی شراکت میں 107 رنز کا اضافہ کیا۔  208 رنز کے مجموعی اسکور پر مچل مارش 47 رنز بنانے کے بعد محمد حفیظ کی گیند پر اسد شفیق کو کیچ دے بیٹھے ۔

اس موقع پر اسٹیو اسمتھ نے پاکستانی بولنگ لائن کے سامنے بھرپور مزاحمت کی کوشش کی لیکن 238 کے مجموعے پر وہ بھی 97 رنز بنانے کے بعد یاسر شاہ کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوگئے، جس کے فوری بعد بریڈ ہیڈن بھی 13 رنز بنانے کے بعد ذوالفقار بابر کی گیند پر بولڈ ہوگئے۔

بریڈ ہیڈن کے بعد مچل جانسن کو یاسر شاہ نے آؤٹ کیا، جس کے بعد مچل اسٹارک کو بھی یاسر شاہ نے پویلین کی راہ دکھائی، 246 رنز کے مجموعہ اسکور پر ناتھن لیون کی صورت میں آسٹریلیا کا آخری بلے باز بھی آؤٹ ہوگیا۔

اظہر علی اور مصباح کی ریکارڈ ساز سنچریوں نے پاکستان کو بیس سال بعد کینگروز کو دھول چاٹا دی، بیس سال بعد آسٹریلیا کیخلاف کلین سوئپ کیلئے آخری روز پاکستان کو صرف چھ وکٹ درکار تھی۔

گذشتہ روز شاہینوں نے دوسری نامکمل اننگز دو کھلاڑی آؤٹ اکسٹھ رنز شروع کی۔ ڈبل سنیچری بنانے والے یونس خان چھیالیس رنز بناکر آؤٹ ہوئے۔۔۔

مصباح الحق کے وکٹ پر آتے ہی میچ کا رنگ بدل گیا، جس کو ٹک ٹک کو ٹیسٹ سے ٹی ٹوئنٹی میں تبدیل کردیا، تیز ترین سنچری داغ کر مصباح ایک ٹیسٹ کی دونوں اننگز میں سنچریاں بنانے والے آٹھویں پاکستانی بنے۔  اظہر علی نے بھی دیر نہ لگائی پہلی اننگز کے بعد دوسری اننگز میں بھی سنچری داغ کر دونوں اننگز میں سنچری جڑنے والے نویں پاکستان کا اعزاز حاصل کیا۔۔

چھ سو تین رنز کا پہاڑکھڑاکرکے شاہینوں نے کینگروز کی رہی سہی اکڑ نکال دی۔ اور چوتھے روز کھیل کے اختتام پر تک آسٹریلیا کے چار بیٹسمینون کو پویلین پہنچا کر میچ کو پوری طرح اپنی گرفت میں لے لیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں