پاک ایران اجلاس، دونوں ممالک کسی بھی قسم کی کشیدگی کے متحمل نہیں -
The news is by your side.

Advertisement

پاک ایران اجلاس، دونوں ممالک کسی بھی قسم کی کشیدگی کے متحمل نہیں

تہران : پاک ایران سرحد سیکورٹی اجلاس تہران میں ہوا، جس میں دونوں ممالک کے اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔

اجلاس میں امن و امان کی صورتحال اور سرحد پر سیکورٹی کا جائزہ بھی لیا گیا۔  ایف سی ترجمان کے مطابق اجلاس میں آئی جی ایف سی میجر جنرل اعجاز شاہد اور ایرانی بارڈر پولیس چیف جنرل قاسم راضی شریک ہوئے ۔

اجلاس میں گزشتہ روز پاک ایران سرحد پر ہونے والے واقعے کا جائزہ لیا گیا، تبادلہ خیال کرتے ہوئے دونوں اعلیٰ حکام نے دو طرفہ تعلقات استوار کرنے اور سرحدی علاقوں میں دہشت گردی کے واقعات کی روک تھام کو وقت کی اہم ضرورت قرار دیا۔

اجلاس میں انٹیلی جنس معلومات بڑھانے پر بھی اتفاق ہوا اور یہ بھی فیصلہ بھی کیا گیا کہ دونوں ممالک کسی بھی قسم کی کشیدگی کے متحمل نہیں ہو سکتے، لہذا سرحدوں کی کشیدہ صورتحال کو ختم کرنے کے لیے ہر ممکن کوششیں کرنی چاہئیں۔

اس موقع پر آئی جی ایف سی میجر جنرل اعجاز شاہد کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک کی سیکورٹی فورسسز میں باہمی رابطے کو مربوط بنایا جائے اور ساتھ ہی فورسسز کے درمیان حقائق پر مبنی اطلاعات کا تبادلہ بھی ہو ۔ سرحدی حدود کا احترام اور قانون کی پاسداری سے ہی معاملات میں بہتری لائی جا سکتی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف موثر کارروائی بھی دونوں ممالک کے تعلقات پر منحصر ہیں، یہ ہنگامی اجلاس گزشتہ روز ایرانی فورسسز کے پاکستانی حدود میں بلااشتعال فائرنگ کے بعد طلب کیا گیا، جس کے نتیجے میں ایک ایف سی اہلکار جاں بحق اور دو زخمی ہوئے۔

واضح رہے ایران نے گزشتہ ہفتے پاکستان کو دھمکی دی تھی کہ پاکستانی حکومت نے اپنی سرزمین کو شدت پسندوں سے محفوظ بنانے کے لیے ان کے خلاف کارروائی نہ کی تو ایران پاکستانی علاقے میں خود کارروائی کرے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں