The news is by your side.

Advertisement

پاک ایران گیس پائپ لائن کا منصوبہ کھٹائی میں پڑگیا

اسلام آباد: پیپلز پارٹی کی دور حکومت میں ایران کے ساتھ طے پانے والا پاک ایران گیس پائپ لائن کا منصوبہ کھٹائی میں پڑگیا۔

گیس پائپ لائن منصوبہ پیپلز پارٹی کے گذشتہ دور حکومت میں طے پایا،  پیٹرولیم اور قدرتی وسائل کے وفاقی وزیر شاہد خاقان عباسی نے قومی اسمبلی میں ایک ضمنی سوال کے جواب میں بتایا کہ بین الاقوامی پابندیوں کی عدم موجودگی میں یہ منصوبہ تین سال کے اندر مکمل ہوسکتا تھا لیکن اب ایران پر پابندیوں کے باعث گیس پائپ لائن منصوبے پر حکومت مزید کام نہیں کرسکتی، اس لیے کہ بین الاقوامی پابندیاں سنگین مسئلہ ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ گیس کے متبادل منصوبوں پر حکومت نے کام شروع کر دیا ہے، وفاقی وزیر نے قومی اسمبلی کے ارکان کو بتایا کہ گوادر میں ایل این جی گیس ٹرمینل منصوبے پر کام جاری ہے، شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ملک میں گیارہ فیصد گیس چوری ہوررہی ہے، وفاق کے پاس چوری روکنے کا کوئی اختیار نہیں ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں