پاک فوج دہشتگری کے خاتمے تک آپریشن جاری رکھے گی، جنرل عاصم باجوہ -
The news is by your side.

Advertisement

پاک فوج دہشتگری کے خاتمے تک آپریشن جاری رکھے گی، جنرل عاصم باجوہ

بنوں: پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل عاصم باجوہ کہتے ہے کہ پاکستان بارڈر پر کسی بھی قسم کی جنگ یا جھڑپ نہیں چاہتے اور ہمیشہ سرحد پر امن کی بات کرتے ہیں تاہم اگر سرحد پار سے جارحیت کی جائے گی تو اس پر خاموش نہیں بیٹھا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق پاک فوج کے ترجمان جنرل عاصم باجوہ نے بنوں میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہو ئے کہا کہ پاکستان بار باراعلان کرچکا ہے کہ بارڈ پرامن چاہتے ہیں تاہم اگر بھارت کی جانب سے جب بھی سرحدی خلاف ورزی ہوگی اس پر خاموشی کے بجائے بھرپور انداز میں جواب دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ کوشش ہے کہ شمالی وزیرستان میں جاری آپریشن “ضرب عضب” جلد مکمل کرلیا جائے تاہم آپریشن کے حوالے سے کوئی ٹائم فریم نہیں دیا گیا تھا اور یہ اپنے پلان کے مطابق درست سمت کی جانب گامزن ہے جبکہ آپریشن کے دوران اب تک 1100 دہشتگردوں کو ہلاک کیا جاچکا ہے۔

جنرل عاصم کا کہنا تھا کہ خیبر ایجنسی کے ان علاقوں میں خفیہ اطلاعات پرآپریشن جاری ہے جہاں دہشتگرد دوبارہ پاؤں جمانے کی کوشش کر رہے ہیں جبکہ شمالی وزیرستان میں آپریشن ضرب عضب سے قبل بعض دہشتگرد علاقہ چھوڑ کر افغانستان کے راستے کوکل خیل اور وادی تیرا میں اکھٹے ہوگئے تھے اورپاک فوج ان کے خلاف بھی ایک منصوبے کے تحت آپریشن کررہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ شمالی وزیرستان کے متاثرین کو تمام سہولیات دینا چاہتے ہیں اور ان کی اپنے علاقوں میں واپسی پاک فوج کی اوالین ترجیح ہے۔

ایک سوال کے جواب میں جنرل عاصم کا کہنا تھا کہ کچھ لوگ فوج کے خلاف پروپیگینڈا کر رہے ہیں پاکستان کا ہر فوجی جواب مکمل سامان سے لیس ہے اور آپریشن زدہ علاقوں میں کسی بھی گھر میں ایسا کو ئی سامان موجود نہیں جو ان کے کام آسکے۔ انھوں نے مزید کہا کہ یہ محض ایک پروپیگینڈا ہے کہ لوگوں کا سامان غائب ہو رہا ہے، جس گھر میں جو متاثرین نے چھوڑا ہے وہ اپنی جگہ پر موجود ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ آپریشن صرف اور صرف دہشتگری کو ملک سے ختم کرنے کے لئے کیا جارہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں