پبلک سروس کمیشن کی زیرِ تربیت افسر نبیہہ چوہدری کی ہلاکت معمہ بن گئی -
The news is by your side.

Advertisement

پبلک سروس کمیشن کی زیرِ تربیت افسر نبیہہ چوہدری کی ہلاکت معمہ بن گئی

لاہور: پبلک سروس کمیشن کی زیرِ تربیت افسر نبیہہ چوہدری کی پُراسرار موت معمہ بن گئی ہے، پولیس نے مقتولہ کی ڈائری قبضے میں لے کر تفتیش شروع کر دی ہیں۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ  نبیہہ چوہدری نے خودکشی کی ہے جبکہ نبیہہ کے اہل خانہ نے پولیس کا دعویٰ تسلیم کرنے سے انکار کردیا ہے۔

گذشتہ روز غالب مارکیٹ کے قریب آڈٹ اکاؤنٹنگ اینڈ ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ کے دفتر میں لگی آگ اور خاتون نبیہہ کی ہلاکت معمہ بن گئی، نبیہہ کی ڈائری تحقیقاتی اداروں کو مل گئی، پولیس کے مطابق ڈائری میں ہے کہ عمر نامی دوست نے دھوکا دیا، ٹیلی فون نہیں سن رہا، وہ جواب نہیں دے رہا، پٹرول منگوا لیا، خودکشی کرنے لگی ہوں۔

اہل خانہ نے خودکشی کے الزام کو تسلیم کرنے سے انکار کیا اور ملزمان کی گرفتاری کا مطالبہ کیا، پولیس نے عمر کی تلاش شروع کردی۔

تحریر کو فرانزک معائنے کیلئے بھجوا دیا گیا ہے،عمر تک پہنچنے کیلئے نبیہہ کے فون کو قبضے میں لے کر ڈیٹا بھی حاصل کر لیا گیا ہے۔

نبیہہ چوہدری کراچی کی رہائشی تھیں، اطلاعات کے مطابق نبیحہ کے والد اسلم چوہدری کو بھی دو ماہ قبل  ایم اے جناح روڈ پر قتل کردیا گیا تھا، مقتول داؤد کالج کے پرنسپل تھے، پولیس مختلف زاویوں سے تفتیش کر رہی ہے، مزید تحقیقات جاری ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں