site
stats
خیبر پختونخواہ

پشاور:اے این پی کے رہنما میاں مشتاق پر حملے کی ابتدائی رپورٹ مکمل

پشاور میں اے این پی کے رہنما میاں مشتاق پر حملے کی ابتدائی رپورٹ پولیس نے مکمل کرلی، حملہ آور تربیت یافتہ ٹارگٹ کلرز تھے جبکہ امیر مقام پر حملے کا مقدمہ انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت درج کرلیا گیا۔

پشاورکے نواحی علاقے بڈھ بیر میں اتوار کے روز عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما میاں مشتاق فائرنگ سے دوساتھیوں سمیت جاں بحق ہوئے، ابتدائی رپورٹ کے مطابق حملہ آوروں کی تعداد تین تھی، جو موٹرسائیکل پر سوار تھے۔

ملزمان نے نائن ایم ایم اور تیس بور کی پستولوں سے گاڑی پر دس گولیاں فائر کیں، رپورٹ کے مطابق حملہ آور تربیت یافتہ ٹارگٹ کلر تھے، جنھوں نے تمام گولیاں گاڑی کے فرنٹ پر ماری، پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کرکے ملزمان کی گرفتاری کے لئے سرچ آپریشن شروع کردیا۔

دوسری جانب شانگلہ میں وزیراعظم کے مشیر انجیئر امیر مقام پر حملے کا مقدمہ بھی انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرلیا گیا۔ ایف آئی آر میں زین العابدین، عمر خان اور حبیب مالک ملزمان نامزد کئے گئے، بتایا جاتا ہے نامزد تینوں ملزمان دہشت گردی کے مختلف مقدمات میں شانگلہ پولیس مطلوب تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top