The news is by your side.

Advertisement

پشاور: حیات آباد امام بارگاہ پر حملے کا مقدمہ درج

پشاور: حیات آباد امام بارگاہ پر ہونے والے حملے کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے جبکہ حملے کی ذمہ داری تحریک طالبان نے قبول کرلی ہے۔

پشاور حیات آباد امام بارگاہ پر ہونے والے حملے کا مقدمہ کاونٹر ٹیرر ازم ڈیپارٹمنٹ نے درج کرلیا ہے، مقدمے میں کالعدم تحریکِ طالبان پاکستان کے عمرعرف نارے اور دیگر کو نامزد کیا گیا، مقدمہ دہشتگردی کی دفعات کے تحت درج کیا گیا ہے۔

ملزم عمر آرمی پبلک اسکول حملے میں بھی مطلوب ہے۔

تحقیقاتی ٹیموں کے مطابق حملہ آور حیات آباد سے متصل سرحدی علاقے شاکس کے راستے داخل ہوئے، واقعے میں دو خود کش حملہ آوروں نے خود دھماکے سے اڑایا جبکہ ایک حملہ آور کو ہلاک کیا گیا، تحقیقاتی ٹیموں نے عینی شاہدین اور زخمیوں کے بیانات بھی قلمبند کرلئے ہیں، شہر بھر کی سیکورٹی بھی انتہائی سخت کردی گئی ہے۔

یاد رہے گزشتہ روز حیات آباد میں پاسپورٹ آفس کے قریب امام بارگاہ مسجد میں ایک سے زائد دھماکے ہوئے، جس کے نتیجے میں 20افراد جاں بحق جبکہ 50افراد زخمی ہوگئے تھے۔ عینی شاہد کے مطابق نمازِ جمعہ ادا کی جارہی تھی کہ چھ سے سات دہشتگرد جو پولیس کی

یونیفارم میں تھے، مسجد میں داخل ہوئے فائرنگ کرکے سیکیورٹی ختم کی اور دستی بم پھینکے جبکہ پھر ایک دہشتگرد نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں