پنجاب اور آزاد کشمیر میں بارشوں نے تباہی مچادی، 50افراد جاں بحق -
The news is by your side.

Advertisement

پنجاب اور آزاد کشمیر میں بارشوں نے تباہی مچادی، 50افراد جاں بحق

لاہور: پنجاب اور آزاد کشمیر میں لگاتار بارشوں نے تباہی مچا دی، دیواریں، درخت اور چھتیں گرنے سے پچاس سے زائد افراد جاں بحق ہوگئے۔

گذشتہ روز سے شروع ہونے والی مون سون کی طوفانی بارشوں نے کئی گھروں کے چراغ گل کردیئے، لاہور کے مختلف علاقوں میں گھروں کی چھتیں گرنے سے ایک ہی خاندان کے چھ افراد سمیت سولہ افراد زندگی کی بازی ہار گئے، لاہور میں بارشوں کے باعث نشیبی علاقے زیر آب آگئے، سمن آباد اور جوہر ٹاؤن میں دو افراد کرنٹ لگنے سے ہلاک ہوئے۔

چھتیں گرنے سے سبزہ زار میں ایک اور جی او آر بہاولپور ہاؤس میں ملازمین کوارٹر میں میاں بیوی ہلاک ہوگئے جبکہ فیصل آباد میں پانچ ، گوجرانوالہ چھ، سیالکوٹ میں پانچ، پسرور میں تین قصور میں چار ، خانیوال میں بارشوں نے تین افراد کی جان لے لی۔ حکومت پنجا ب نے بارشوں میں ہلاک ہونے والوں کے لواحقین کے لئے پانچ لاکھ روپے فی کس کےامداد کا اعلان کیا ہے۔

آزادکشمیر میں بھی تین فوجیوں سمیت سات شہری لقمہ اجل بنے، موسلادھار بارش کے باعث اسلام آباد،راولپنڈی میں نالہ لئی بپھر گیا، نالہ لئی میں سیلاب کے خطرے کے پیش نظر قریبی آبادیوں میں خطرے کے سائرن بجائے گئے۔

راولپنڈی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ نالہ لئی میں کٹاریاں اور گوالمنڈی کے قریب پانی کی سطح سترہ فٹ تک پہنچ گئی، سیلاب کے پیش نظر فوج کو بھی الرٹ رہنے کی ہدایات جاری کر دی گئیں ہیں  راولپنڈی میں مکان کی چھت گرنے سے انیس افراد ملبے تلے دب گئے ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کی جانب سے جاری کیے گئے اعلامیہ کے مطابق کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کیلئے پاک فوج کے دستے سیالکوٹ، نارووال، ہیڈمرالہ، وزیرآباد، جلالپور جٹاں کیلئے روانہ کردیئے گئے ہیں۔ لاہور کے نواحی علاقے شاہدرہ میں بھی سیلاب کے خدشے کے پیش نظر فوجی دستوں کو تیار رہنے کا حکم دے دیا گیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں