The news is by your side.

Advertisement

پنجاب میں پیٹرول کی قلت کے بعد کراچی میں بھی پیٹرول کا مصنوعی بحران ہیدا ہوگیا

کراچی: پنجاب کے بعد کراچی میں بھی پیٹرول کی نایابی کا خدشہ پیدا ہو گیا ، پیر کے روز شہر کے تیس فیصد پیٹرول پمپ بند کر دئے گئے۔

منافع خوروں نے پنجاب میں پیٹرول کی قلت کے بعد اب کراچی میں بھی پیٹرول کا مصنوعی بحران پیدا کردیا ہے جس کے بعد شہر بھر کے پیڑول پمپس پر گاڑیوں اور موٹرسائیکلوں کی لمبی لائنیں لگنے سے بیشتر پیڑول پمپس پر پیڑول ختم ہو گیا ہے۔پنجاب کے شہریوں کی طرح اب کراچی کے شہری بھی پیڑول کے حصول کے لیے پریشان پھر رہے ہیں۔

شہر کے بیشتر پمپس پر پیٹرول مصنوعی بحران پید اکرنے کی کوشش کی جارہی ہے جس کے سبب عوام کی بڑی تعداد پیٹرول کے حصول کے لیے پریشان نظر آتی ہے۔ کراچی میں ڈیفنس سمیت شہر کے مختلف علاقوں کے پیٹرول پمپس پر شہریوں کا رش دیکھنے میں آیا جہاں شہری پیٹرول کے لیے گاڑیوں کے علاوہ بوتلیں اور بڑے کین لیے لائنوں میں کھڑے تھے جبکہ اس دوران شہریوں کے درمیان لائنوں کے معاملے پر تلخ کلامی اور ہاتھا پائی کے واقعات بھی پیش آئے۔

پیٹرول مافیا نے صورتحال سے فائدہ اٹھانے کی کوشش کرتے ہوئے پیٹرول کا مصنوعی بحران پیدا کیا ہوا ہے اور بیشتر پمپس پر پیٹرول ہوتے ہوئے بھی شہریوں کو نہیں دیا جارہا ہے جبکہ کلفٹن اور ڈیفنس سمیت شہر کے مختلف علاقوں لیاقت آباد، نیو کراچی اور اولڈ سٹی ایریا میں بھی بیشتر پیٹرول پمپس بند کردیئے گئے ہیں۔

دوسری جانب پیٹرول ڈیلرز کا کہنا ہےکہ اتوار کو شہر میں پیٹرول کی سپلائی نہیں ہوئی اور اگلے روز پیٹرول مطلوبہ مقدار سے آدھی مقدار میں فراہم کیا گیا تاہم عوام افواہوں پر کان نہ دھریں اور صبرو تحمل سے کام لیں۔

چیئرمین پیڑولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن عبدلسمیع کا کہنا ہے کہ افواؤں کی وجہ سے لوگوں نے پیڑول اور ڈیزل کی ذخیرہ اندوزی شروع کر دی ہے۔ جس کی وجہ سے پیڑول کی مصنوعی قلت کا سامنا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں