The news is by your side.

Advertisement

پھلوں کے جوس کا زیادہ استعمال ذیابطیس کا خطرہ بڑھا دیتا ہے

گلاسگو: پھلوں کے میٹھے جوس کا زیادہ استعمال ذیابیطس میں مبتلا ہونے کا خطرہ بڑھا دیتا ہے۔

گلاسگو یونیورسٹی میں ہونے والی تحقیق کے مطابق پھلوں کے میٹھے جوس کا زیادہ استعمال ذیابیطس میں مبتلا ہونے کا خطرہ بڑھا دیتا ہے، تحقیق میں کہا گیا ہے کہ مشروبات کے استعمال اورسست طرزِ زندگی کے باعث ذیابیطس کا امکان کئی گُنا زیادہ بڑھ جاتا ہے۔

عام طور پر پھلوں کے جوس کو انسانی صحت کے لئے انتہائی مفید تصور کیا جاتا ہے،اور اکثر ڈاکٹر ان کے استعمال کا مشورہ دکھائی دیتے ہیں لیکن آپ کو جان کر حیرت ہوگی کہ طبی ماہرین کے مطابق پھلوں کے جوس بھی انسانی صحت کیلئے تباہ کن ثابت ہو سکتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ فروٹ جوسز میں چینی کی مقدار کولڈ ڈرنکس کے برابر ہی ہوتی ہے، جس سے امراض کا خطرہ بڑھ جاتا ہے اور تین ماہ تک لگاتار آدھا لیٹر جوس کا استعمال انسولین کے نظام میں خرابی اورموٹاپے کا سبب بن سکتا ہے۔

پھلوں کے میٹھے جوس کا زیادہ استعمال بلڈ پریشر کا باعث بن سکتا ہے، طبی ماہرین کے مطابق روزانہ ایک گلاس فروٹ جوس کے استعمال سے دوران خون میں دباؤ بڑھ جاتا ہے جس سے دل کے دورے کا خطرہ بڑھ جاتا ہے،جبکہ عام تصور کیا جاتا ہے کہ پھلوں کا جوس صحت بخش ہوتا ہے۔

طبی ماہرین کے مطابق پھلوں میں ضروری وٹامن ہونے کے ساتھ شکر کی بہت زیادہ مقدار اور نقصان دہ فائبر بھی ہوتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں