site
stats
اہم ترین

پیرس میں دہشت گردی کے خلاف تاریخ سازمارچ

پیرس: فرانس کے دارالحکومت میں دہشت گردی کے خلاف تاریخ سازمارچ ہورہا ہے جس میں چالیس سے زائد ممالک کے سربراہان سمیت ہزاروں افراد شریک ہیں۔

تفصیلات کے مطابق یہ تاریخ ساز مارچ فرانس پیرس میں دہشت گردوں کے حملے ردعمل میں کیا جارہا ہے جس میں سترہ افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

مارچ کی قیادت سانحے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے خاندان اور فرانسیسی صدر فرانکوئس ہولینڈ کررہے ہیں اور ان کے ہمراہ اسرائیلی صدر بنجمن نیتن یاہو اور فلسطینی صدر محمود عباس بھی ہیں۔

مارچ میں اردن کے بادشاہ اورملکہ، اطالوی وزیراعظم میتیو رینزی، جرمن چانسلر انجیلا مرکل اوربرطانوی وزیراعظم ڈیوڈ کیمرون بھی شامل ہیں جبکہ امریکی صدر باراک اوبامہ کی نمائندگی اٹارنی جنرل ایرک ہولڈر نے کی۔

یہ ای تاریخ ساز موقع ہے کہ جب عوام اور مختلف ممالک کے سربراہ کسی ایک مقصد کی حمایت میں اتنی بڑی تعداد میں سڑکوں پرآئے ہوں اور اس کی اہمیت اس لئے بھی بڑھ جاتی ہے کہ اسرائیل اورفلسطین کے سربراہانِ مملکت بھی ایک ہی مقصد کے تحت اس مارچ میں شریک ہیں۔

مارچ کےشرکاء نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ دنیا کو دہشت گردی سے پاک کرنے کے لئے ہرممکن اقدامات کئے جائیں گے۔

مارچ کا آغاز ’چارلی ہبڈو‘نامی جریدے کےدفتر کے وریب سے ہوا ہے جہاں دہشت گردوں نے حملہ کیا تھا۔ پیرس کی سڑکوں پرعوام کا سمندر امڈ آیا ہے اورعوام قومی ترانہ گارہے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top