پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کے کارکنان نے کنٹینرزگراڈالے -
The news is by your side.

Advertisement

پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کے کارکنان نے کنٹینرزگراڈالے

اسلام آباد: تحریکِ انصاف اورعوامی تحریک کے کارکنان نے شاہراہِ دستور پر موجود کنٹینرز کی آخری دیوار کو بھی گرا ڈالا۔

پاکستان تحریکِ انصاف اور پاکستان عوامی تحریک کے کارکنان کا جوش ولولہ اب بھی برقرار ہے، کارکنان نے رات بھر پولیس کے کریک ڈاوًن کے خوف سے پہرے داری کی، صبح ہوتے ہی کارکنان کے صبرکا پیمانہ لبریز ہوگیا اور کارکنان نے طیش میں آکر شاہراہِ دستور پر موجود تین کنٹینرز اُلٹ ڈالے۔

راستہ بند رکھنے کے لئے کنٹینرز کے اُوپر کنٹینرز رکھے گئے تھے اور یہ کنٹینرز کی آخری دیوارتھی، جس کے ہٹنے سے شاہراہِ دستور سے ریڈیو پاکستان چوک تک کا تمام راستہ کلیئر ہوگیا۔

دونوں جماعتوں کے کارکنان تمام سرکاری عمارتوں کے بھی باہرموجود ہیں جبکہ کارکنان کو مزید رکاوٹیں ہٹانے کا بھی کہا گیا ہے۔

پی ٹی آئی اور پی اے ٹی کے کارکنانوں بہت متحرک نظرآئےاور کنٹینرزگرانے کے بعد کارکنان نے خوشی میں رقص اورنعرے بازی بھی کی جبکہ پولیس کا کہیں نام ونشان بھی نظرنہ آیا۔

گزشتہ روز ریڈ زون میں بڑے کریک ڈاوٗن کے خطرے کے پیش نظر پی اے ٹی اور پی ٹی آئی کے کارکنان نے رات اپنے قائدین کے کنٹینرز کے گرد بسر کی اور اور کسی بھی صورتحال سے نمٹنے کے لئے چوکنا رہے۔

ریڈ زون میں بڑے کریک ڈاون کی اطلاعات پر آزادی اور انقلاب مارچ کے شرکاء نے رات جاگ کر گزاری، پاکستان عوامی تحریک کے کارکنان رات بھر بڑی تعداد میں ڈاکٹر طاہر القادری کے کنٹینرز کے گرد گھیرا ڈالے رکھا اور اپنے لیڈر کی حفاظت کے لئے چوکس رہے، کارکنوں نے جگہ جگہ حفاظت کے پیش نظر رکاوٹیں کھڑی کر رکھی تھیں ۔

کریک ڈاون کی خبر پر عمران خان بھی دھرنے میں کارکنوں کے درمیان جا پہنچے اور رات کنٹینرمیں کارکنوں کے حصار میں گزاری، صبح ہوئی تو کارکنوں کو اطمینان ہوا، امید کی نئی کرن لئے دن کا آغاز کیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں