site
stats
اہم ترین

پی ٹی وی حملے کے دوران عمران خان اورعارف علوی کی مبینہ گفتگو منظرِ عام پر

اسلام آباد: تحریکِ انصاف کے سربراہ عمران خان اور تحریکِ انصاف کے رہنماء عارف علوی کی مبینہ ٹیلیفونک گفتگو منظرِ عام پر آگئی ۔

سیاستدانوں کےفون ٹیپ نہ کرنے کے حکومتی دعووں کی قلعی کھل گئی، تیس اگست کو پی ٹی وی حملےکے دوران عمران خان، عارف علوی کی مبینہ گفتگو سوشل میڈیا پر زیرِ گردش ہیں۔

ٹیلیفونک گفتگو میں عارف علوی عمران خان کو پی ٹی وی پر حملے سے متعلق بتا رہے ہیں۔

جواب میں عمران خان کا کہنا تھا کہ اچھا ہے، اچھا ہے، اس سے حکومت پر پریشر بڑھے گا، حکومت پر پریشر بڑھے تاکہ نواز شریف استعفی دے، ن لیگ معاملہ جوائنٹ سیشن کی طرف لے جانا چاہتی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ کوشش کریں سب سے کریں تاکہ حکومت پر دباؤ بڑھے۔

گفتگو میں عارف علوی ایم کیو ایم سے بات چیت پر آگاہ کر رہے ہیں، عارف علوی نے کہا کہ ایم کیو ایم کا ڈھائی بجے تک انتظار کیا لیکن کوئی کال نہیں آئی۔عارف علوی نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہنا ہے کہ صاف ظاہر ہے کہ گفتگو ایڈٹ کی گئی ہے، پہلے بھی خفیہ کالز پر استعفی دے چکا ہوں، دھرنے کیلئے ایم کیو ایم سے بات چیت ڈھکی چھپی نہیں ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top