The news is by your side.

Advertisement

چوہدری نثارکا فرنٹئیرکانسٹیبلری پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب

چارسدہ : وفاقی وزیرِ داخلہ چوہدری نثار علی خان نے کہا ہے کہ ہم سب کی ذمہ داری ہے کہ اسلام کا نام لے کر تشدد کا راستہ اختیار کرنے والوں کا راستہ روکا جائے، بیرونی ہاتھ کے ثبوت کے لئے بھارتی وزیر کا بیان کافی ہے۔

وفاقی وزیرِداخلہ چوہدری نثارعلی خان تحصیل چارسدہ کے علاقے شب قدرمیں فرنٹئیر کانسٹیبلری کی سالانہ پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب کررہے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایف سی کے جوانوں نے اپنی بے مثال قربانیوں اور لازوال کاروئیوں کے سبب نہ صرف وزارتِ داخلہ کا بلکہ ملک وقوم کا سر فخر سے بلند کردیا ہے۔

انہوں نے اس موقع پرایف سی کے شہید ہونے والے ایف سی کے 341 جوانون اور زخمی ہونے والے 500 سرفروشوں کو خراجِ تحسین بھی پیش کیا۔

چوہدری نثار نے پاس آؤٹ ہوکر فورس کا حصہ بننے والے کیڈٹس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کی تقریب دہشت گردی کے منہ پرتمانچہ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ’’ہم اپنی مساجد، اسکولوں اورگلیوں کو محفوظ رکھنا چاہتے ہیں، آپ جب میدان میں ہوں گے تو آپ کے ایک ہاتھ میں اسلام اوردوسرے میں ملک کا پرچم ہوگا‘‘۔

چوہدری نثارکا کہنا تھا کہ فرنٹئیرکانسٹیبلری کی تربیت فوج سے کرائی جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی دہشت گردی میں بیرونی عناصر کے ملوث ہونے کے ثبوت میں بھارتی وزیر داخلہ کا ایک بیان ہی کافی ہے۔


پاکستان کوایٹمی قوت بنے سترہ برس بیت گئے


چوہدری نثار نے اپنے خطاب کے دوران جوانوں کو یومِ تکبیرکی مبارک باد بھی دی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں