چین میں زلزلوں کی پیشن گوئی کے لئے جانوروں کااستعمال: رپورٹ -
The news is by your side.

Advertisement

چین میں زلزلوں کی پیشن گوئی کے لئے جانوروں کااستعمال: رپورٹ

بیجنگ: چینی حکومت کے ماہرین موسمیات نے زلزلے کی پیشن گوئی کے لئے مرغیوں، مچھلیوں اورمینڈکوں کو استعمال کرنا شروع کردیا ہے۔

چین کے مشرقی شہرنانجنگ کے زلزلہ پیما بیورو نے جانوروں کے سات فارمزکو زلزلہ پیما مرکزمیں تبدیل کردیاہے۔

فارم پرموجود جانوروں کے نگہبانوں نے پابند کیا گیا ہے کہ وہ بیورو کو دن میں دو مرتبہ جانوروں کے رویوں کے بارے میں اطلاع دیں گے۔

ماہرین کی جانب سے کہا جارہا ہے کہ جانوروں کے رویے زلزلے کے پیشن گوئی کرسکتے ہیں جیسے مرغیاں درختوں کی چوٹیوں پرجانے لگیں، مچھلیاں پانی سے باہر اچھلنے لگیں یامینڈک گروہ میں گھومنے لگیں تو یہ ممکنہ طورپرزلزلے کی نشانی ہوسکتی ہے۔

بیورو کی جانب سے 7 اور فارمز اس اسکیم میں شامل کرنے کی تیاری کی جارہی ہے اور اس کے لئے تین سے زیادہ جانوروں کو مزید اقسام کو اس ٹیسٹ میں شامل کرنا ہوگا۔

دوسری جانب جانوروں کے نگہبان اس صورتحال سے زیادہ خوش نہیں ہیں ان کا کہنا ہے کہ ‘’جانوروں کو جب تنگ کیا جاتا ہے تو وہ عجیب روہے اختیار کرتے ہیں اس میں کوئی غیر معمولی بات نہیں ہے‘‘۔

واضح رہے کہ چین میں جانوروں کے ذریعے زلزلے کی پیشن گوئی کوئی نئی چیز نہیں ہے اس سے قبل بھی نان چانگ نامی شہر میں کتوں کے ذریعے زلزلے کی پیشن گوئی کی جاسکتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں