ڈنڈے سے کوئی تبدیلی نہیں آسکتی،خواجہ سعد رفیق -
The news is by your side.

Advertisement

ڈنڈے سے کوئی تبدیلی نہیں آسکتی،خواجہ سعد رفیق

اسلام آباد: وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ اب کوئی ایمپائر نہیں آئے گا، ڈنڈے سے کوئی تبدیلی نہیں آسکتی اور نہ پاکستان ڈنڈے کے زور پر قائم ہوا،وہ قومی اسمبلی کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کررہے تھے،

خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ہماری بد قسمتی ہے کہ ہمیں نوزائیدہ اور ناتجربہ کار سیاست داں ملے جن سے ہمارا مقابلہ ہے، انہوں نے عمران خان کو مشورہ دیا کہ وہ واپس آجائیں اتنا آگے نہ جائیں کہ آپ کی سیاست ختم ہو جائے،

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ عمران خان اپنے خطاب میں بازاری زبان استعمال کررہے ہیں وہ اپنا دامن دیکھتے نہیں اور دوسروں پر کیچڑ اچھالتے ہیں، ایوان کے ارکان کے بارے میں جس طرح کے بیانات دیئے گئے، وہ انتہائی قابل مذمت ہیں،

انہوں نے کہا کہ عمران خان کو کسی کی کردار کشی کی اجازت نہیں دینگے،جواب ہم بھی دے سکتے ہیں پر ہم گالی نہیں دیں گے۔ پاکستان عوامی تحریک  کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری کو مخاطب کرتے ہوئے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ  آپ نے کینیڈا سے پاکستان آنے سے قبل ہی خود کو قائد انقلاب کہنا شروع کردیا، آپ کو تو انقلاب کا مطلب ہی نہیں معلوم،آپ کیا انقلاب لائیں گے؟؟

وفاقی وزیر نے کہا کہ یہ سیاست نہیں بدکلامی ہو رہی ہے، ہم پر کارکنان کا شدید دباؤ ہے کہ دھرنے والوں کیخلاف مؤثر کارروائی کیوں نہیں کی جا رہی، لیکن ہم نے صبر کا دامن نہیں چھوڑا،ریاست کو کمزورنہ سمجھا جائے،ہر طرح کے حالات سے نمٹنا جانتے ہیں.

دھرنے دینے والوں نے پاکستان کے آئین سے کھلواڑ کیا ہے،عمران خان اور ڈاکٹر طاہر القادری پاکستان کو پیچھے دھکیلنا چاہتے ہیں، انہوں نے کہا کہ یہ دھرنے نہیں لشکر کشی ہے، دھاوا ہے، آئین پر حملہ ہے،اور جمہوریت پر حملہ ہے،سعد رفیق نے کہا کہ ہم تصادم نہیں چاہتے کیونکہ ملک کسی تصادم کا متحمل نہیں ہو سکتا،

ان کا کہنا تھا کہ خیبر پختونخواہ کا وزیر اعلیٰ دھرنا جیل میں بند ہے اس طرح حکومتیں نہیں چلتیں، جب خیبر پختونخواہ کی جیل پر حملہ ہوا تو وزیر اعلیٰ پرویز خٹک نے استعفیٰ کیوں نہیں دیا۔

.انہوں نے کہا کہ دھرنوں سے ملکی معیشت کو ناقبل تلافی نقصان پہنچا ہے جس کے ذمہدار صرف اور صرف عمران خان اور طاہر القادری ہیں،

،

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں