The news is by your side.

Advertisement

کراچی اسٹاک مارکیٹ بدترین مندی کی لپیٹ میں

ملک میں احتجاجی سیاست کا رنگ گہرا ہونے سےکراچی اسٹاک مارکیٹ بدترین مندی کی لپیٹ میں آگئی۔مارکیٹ ایک دن میں چھےسو چھیاسٹھ پوائنٹس گرگئی۔عید کی نوروزہ طویل تعطیلات کےبعد کراچی اسٹاک مارکیٹ میں نئے کاروباری ہفتےکا آغازخاصا مایوس کن رہا۔

کراچی اسٹاک مارکیٹ کےسابق چئیرمین اور سینئیرممبر عارف حبیب کےمطابق ملک میں احتجاجی سیاست کارنگ گہراہونےسےمارکیٹ مندی کاشکار ہوئی۔اس صورتحال میں ملکی و غیرملکی سرمایہ کاروں نےپرافٹ بک کرتےہوئےشئیرز فروخت کرنےکو ترجیح دی۔

مارکیٹ تجزیہ کاروں کےمطابق ایم کیو ایم کےپارلیمانی لیڈر ڈاکٹر فاروق ستار کےگھر پر رینجرز کےچھاپےکےمنفی اثرات بھی کراچی اسٹاک مارکیٹ پر مرتب ہوئے۔پیر کو مارکیٹ میں بلوچپس کمپنیوں کے شئیرز سمیت تمام سیکٹرز میں فروخت کا دباؤ نمایاں رہا۔

دوران ٹریڈنگ مارکیٹ میں 878 پوائنٹس کی گراوٹ بھی دیکھی گئی۔اختتامی گھنٹوں میں تھوڑی ریکوری آنےسےکاروبار کےاختتام پر مارکیٹ کابینچ مارک 100 انڈیکس 666 پوائنٹس کی کمی سے 29648 پوائنٹس پر بند ہوا

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں