The news is by your side.

Advertisement

کراچی جوایک شہرتھا عالم میں انتخاب

کراچی(ویب ڈیسک) – عروس البلاد کہلانے والا شہر کراچی زیادہ قدیم نہیں ہے لیکن شروع ہی سے اس شہر میں ایک تعمیری ذوق پایا جاتا ہے جسکی کچھ جھلکیاں آپ ملاحظہ کرسکتے ہیں۔

ہوٹل میٹروپول

ہوٹل میٹروپول شہراہ ِ فیصل کے شروعاتی سرے پر واقعے اپنے دور کا ایک حسین اور پر آسائش ہوٹل ہے گو کہ اب یہ اپنی شان و شوکت کھو چکا ہے لیکن آج بھی کراچی کے شہری اسے پہچانتے اور اس کا تذکرہ کرتے ہیں۔

ہوٹل میٹروپول

جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ

کراچی شہر کے نواحی علاقے ملیر کے ساتھ واقع قائد اعظم محمد علی جناح انٹر نیشنل ایئرپورٹ  جس کا شمار دنیا کے بڑے ہوائی اڈوں میں ہوتا ہے زیر ِ نظر تصویر 1952 میں لی گئی تھی۔

کراچی ایئرپورٹ

 ٹاور

ایم اے جناح روڈ اور آئی آئی چندریگر روڈ کے اختتام پر واقع میری ویدر ٹاور انگریزوں کے دور کی یاد گار ہے اور شہر کا لینڈ مارک ہے۔

میری ویدرٹاور

الفینسٹن اسٹریٹ

یہ سڑک کراچی کی معروف تجارتی شاہراہوں میں سے ایک ہے اور اس کا نیا نام زیب النساء اسٹریٹ ہے، زیر ںظر تصویر میں اس سڑک پر اکا دکا سواریاں ہی نظر آرہی ہیں لیکن اب اس سڑک پر ٹریفک کا شدید دباوٗ ہوتا ہے۔

ایلفسٹن اسٹریٹ

سینٹ پیٹرکس اسکول

سینٹ پیٹرکس اسکول کراچی کا دوسرا قدیم ترین اسکول ہے اور یہ سن 1867 میں قائم ہوا۔ یہاں سے کئی مشہور شخصیات نے تعلیم حاصل کی جن میں پاکستان کے سابق صدرِ مملکت اور آرمی چیف جنرل  پرویز مشرف بھی شامل ہیں۔

سینٹ پیٹرکس اسکول

لیاقت علی خان

 زیرِ نظر تصویر پاکستان کے پہلئ وزیرِ اعظم لیاقت علی خان کی لحد کی ہے۔ بعد ازاں قئد اعظم کیے مزار کی توسیع میں قبر اھاطے کے اندر چلی گئی۔

لیاقت علی خان کی قبر

حکیم سعید

 حکیم محمد سعید کا نام دنیا بھر میں کراچی کی شناخت کا باعث ہے انہوں نے پاکستان میں جدیدحکمت کی بنیاد رکھی ، حکیم سعید تمام عمر پاکستان میں طب اور تعلیم کے فروغ کے لئے کوشاں رہے۔

حکیم محمد سعید شہید

 

 نوٹ: اس رپورٹ میں استعمال کی گئی تصاویر سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر موجود پیج ’’وینٹیج پاکستان‘‘ سے لی گئیں ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں