The news is by your side.

Advertisement

کراچی فائرنگ میں ایک ہلاک، منگھوپیر میں رینجرز کا سرچ آپریشن

کراچی: کراچی میں فائرنگ کے مختلف واقعات کے دوران ایک شخص جان بحق اور دو زخمی ہوگئے۔ پولیس اور رینجرز نے مختلف علاقوں میں کاروائیاں کرکے متعدد ملزمان کو حراست میں لے لیا ہے۔ لیاقت آباد میں سندھ گورنمنٹ اسپتال پر کارروائی کےدوران ٹارگٹ کلنگ اوردیگر جرائم میں ملوث ملزمان کو گرفتارکر لیا۔

قانون نافذ کرنیوالےاداروں کی جانب سے کراچی کے علاقے لیاقت آباد میں قائم سندھ گورنمنٹ اسپتال پر چھاپہ مارگیا ہے۔ چھاپے میں ٹارگٹ کلنگ،بھتہ خوری،دیگرجرائم میں ملوث چار ملزمان کو گرفتارکیا گیا ہے۔ قانوں نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ ملزمان کے قبضے سے اسلحہ بھی برآمد ہوا ہے۔ ملزمان کاتعلق سیاسی جماعت سےہے جنھیں نامعلوم مقام پر منتقل کر کے تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔

ادھرمنگھو پیر میں رینجرز نے کالعدم تنظیموں کے ٹھکانوں کی موجودگی کی اطلاع پر سرچ آپریشن کر رہی ہے، جس میں متعدد افراد کے گرفتار ہونے کی بھی اطلاعات ہیں۔

ترجمان رینجرز کا کہنا ہے کہ منگھو پیر کے داخلی اور خارجی راستے بند کر کے سرچ آپریشن کیا جا رہا ہے، جس میں خواتین سرچر سمیت 300 اہلکار حصہ لے رہے ہیں۔ رینجرز نے گرفتار کئے گئے افراد کو نامعلوم مقام پر منتقل کر کے تفتیش شروع کر دی ہے۔

بلدیہ ٹاون میں قانون نافذ کرنے والے اداروں نے مذہبی منافرت پھیلانے کے الزام میں سرفراز نامی شخص کو حراست میں لیکر پوچھ گچھ شروع کردی ہے۔

دوسری جانب کراچی کے علاقے ڈیفنس میں رات گئے ایس پی سی آئی ڈی خرم وارث کےگھرپرنامعلوم افراد نے فائرنگ کی جس کی ایف آئی آر محافظ خرم وارث کی مدعیت میں درخشاں تھانےمیں نامعلوم افراد کے خلاف درج کرلی گئی ہے۔ مقدمےمیں انسداد دہشتگردی کی دفعات شامل ہیں۔

پولیس حکام کے مطابق نارتھ نا ظم آبا د میں نامعلوم دہشتگردوں کی فائرنگ سے اہل سنت والجماعت کا کارکن جبران جان بحق ہوگیا۔ اس کے علاوہ کورنگی صنعتی ایریا اور کلفٹن بوٹ بیسن کے قریب بھی فائرنگ کے دو الگ الگ واقعات میں 2افراد زخمی ہوئے۔ ہلاک اور زخمی ہو نے والوں کو پولیس کاروائی اور طبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کیا گیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں