The news is by your side.

Advertisement

کراچی: قتل و غاری کا سلسلہ جاری، 13افراد ہلاک ،9زخمی

کراچی: فائرنگ اور پرتشدد واقعات میں تیرہ افراد جاں بحق اورنو زخمی ہوگئے جبکہ رینجرز اور پولیس کی مشترکہ کارروائی میں گینگ وار کے اہم کارندے ڈاکٹر شعیب سمیت چھ دہشت گرد مارے گئے۔

کراچی میں قتل و غارت گری کا سلسلہ رک نہ سکا، ملیر میمن گوٹھ کے قریب رینجرز اور پولیس نے جرائم پیشہ افراد کے ٹھکانے پر چھاپہ مارا تو مسلح افراد نے اہلکاروں پر فائرنگ کردی، جوابی فائرنگ کے نتیجے میں گینگ وار کے پانچ کارندے مارے گئے۔

ترجمان رینجرز کے مطابق مقابلے کے دوران گینگ وار بابا لاڈلہ گروپ کا اہم کارندہ ڈاکٹر شعیب بھی ہلاک ہوا، ملزمان کے قبضے سے جدید اسلحہ ، آوان بم ، پولیس اور رینجرز کی وردیاں بھی برآمد کر لی گئیں۔

لیاری رانگی واڑہ میں خفیہ اطلاع پر ملزمان کی گرفتاری کیلئے رینجرز نے چھاپہ مارا تو عزیر بلوچ گروپ کے کارندوں نے فائرنگ شروع کردی، جوابی کارروائی میں ملزم سلمان لال مارا گیا، رات گئے اورنگی ٹاون چشتی نگر میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ایک شخص جان کی بازی ہار گیا۔

نارتھ کراچی میں نجی اسپتال کے قریب فائرنگ سے ایک شخص کو قتل کردیا گیا، قصبہ کالونی کے علاقے میں نامعلوم افراد کی دکان پر فائرنگ سے شخص کو قتل کردیا، واقعے کا عینی شاہد اور مقتول کا دوست یہ منظر دیکھ کر ہارٹ اٹیک کے باعث انتقال کرگیا، گلستان جوہر بلاک بارہ سے ایک شخص کی لاش برآمد ہوئی۔

خاموش کالونی کے قریب فائرنگ سے ایک شخص مارا گیا، لانڈھی نمبر چھ میں مسلح افراد نے الیکٹرونکس کی دکان پر فائرنگ کرکے اقبال نامی شخص کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ پولیس کے مطابق واقعہ بھتے کے تنازعہ پر پیش آیا، ادھر شاہ لطیف ٹاون میں زمین کے تنازعے پر دو گروپوں میں مسلح تصادم میں چار افراد زخمی ہوگئے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں