site
stats
اہم ترین

کراچی میں رینجرز ٹارگٹ کلرز کےنشانےپر

کراچی: ٹارگٹ کلرزنےکراچی میں اب رینجرز کو ہدف بنالیا،ڈبل سواری پرپابندی کے باوجودموٹرسائیکل سواروں نےدورینجرز اہلکاروں کوشہید کردیا۔

کراچی میں پولیس کےبعد رینجرز بھی ٹارگٹ کلرزکے نشانےپرآگئی،چوبیس گھنٹےمیں تین رینجرز اہلکاروں کوشہید کردیاگیا،لانڈھی اسپتال چورنگی پررینجرزکی چوکی کےقریب موٹرسائیکل سوارملزمان نے رینجرزاہلکاروں پرگولیاں برسادیں جس کے نتیجے میں دواہلکارثنااللہ اورسیف الرحمان شدید زخمی ہوگئےجنہیں اسپتال منتقل کیاگیالیکن وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسے۔

فائرنگ کی زدمیں نوسالہ بچی عائشہ جاں بحق اورایک راہگیرزخمی ہوگیا،ڈی آئی جی ایسٹ منیر شیخ کےمطابق حملہ آوروں نے گارڈ کی وردیاں پہن رکھی تھیں اورملزمان رینجرز اہلکاروں کا سرکاری اسلحہ بھی ساتھ لے گئے۔

رات گئےفرنٹیئرکالونی میں فائرنگ سے زخمی رینجرز اہلکاراسپتال میں چل بسا،وزیراعظم نے رینجرزکےجوانوں پرفائرنگ کی مذمت کی ہے اورکہاہےکراچی کےامن کیلئےرینجرزعظیم قربانی دےرہی ہےحملہ بزدلانہ اقدام ہے۔

ہفتہ کےروزگلشن اقبال میں فائرنگ سےجاں بحق اہل سنت ولجماعت کے کارکنان مولانا ہارون،مولانا احتشام اورقاری حفیظ کی نماز جنازہ اداکردی گئی جس میں لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی،کراچی میں بڑھتی ہوئی بدامنی کے پیش نظرحکومت سندھ یکم اگست کی رات بارہ بجےتک ڈبل سواری پربھی پابندی عائد کردی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top