site
stats
بزنس

کراچی میں قیام امن کیلئے حکمت عملی مرتب کرلی،آئی جی سندھ

کراچی: آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی نے کورنگی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ انڈسٹری (کاٹی)میں تاجروں سے ملاقات کی اورسیکیورٹی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا،اس موقع پر کاٹی کے تاجروں کی جانب سے آئی جی سندھ کو شیلڈ پیش کی گئی۔

شرافی گوٹھ میں گینگ وار ملزمان کی جانب سے تاجروں کے اغواء اور ڈکیتیوں پر کورنگی ایسو سی ایشن کے تاجروں نے آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی سے اپنے تحفظات کااظہار کرتے ہوئےایس ایس پی کورنگی نذیر میربہر کی کارکردگی پر عدم اعتماد کا اظہار کیا۔

کورنگی ایسو سی ایشن کے رہنماء میاں زاہد حسین نے کہا کہ فاروق اعوان ایس ایس پی اسپیشل انویسٹی گیشن یونٹ محکمہ پولیس کا فخر ہیں اللہ ان کی عمر دراز رکھے، انہوں نے کہا کہ فاروق اعوان پر حملے میں شہید ہونیوالے افراد کو پچاس ہزار روپے فی کس دیں گے۔

آئی جی سندھ غلام حیدر جمالی نے میڈیاکو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ کراچی میں امن قائم کرناہماری اولین ترجیحات میں شامل ہے،شہر میں دہشت گردی اور انتہا پسندی سمیت کئی چیلنجز کا سامنا ہے۔

سندھ حکومت اور وفاقی حکومت سے سندھ پولیس کے لئے بم پروف گاڑیاں،بلٹ پروف جیکٹ اور دیگر سازو سامان طلب کیا ہے، ان کا کہنا تھا کہ غیر قانونی سمز کی وجہ سے امن و امان کے مسائل بڑھ رہے ہیں،انہوں نے کہا کہ کراچی میں غیر قانونی سمز کی تعداد سات سے آٹھ ملین ہے۔

کراچی کو اسلحہ سے پاک کرنے کیلئے حکمت عملی مرتب کرلی ہے،کراچی میں چند ماہ کے د وران پولیس آپریشن میں تیزی آئی ہے،ٹارگٹ کلنگ بھتہ خوری اور دیگر سنگین جرائم کی وارداتوں میں کمی ہوئی ہے۔

آئی جی سندھ نے کہا کہ کراچی میں دھرنوں کی وجہ سے ٹریفک جام کے مسائل پیدا ہورہے ہیں،دھرنا دینے والی جماعتوں سے گذارش ہے کہ عوامی مسائل کا خیال کریں ۔

گرومندر پر مذہبی جماعت کے دھرنے سے واقف ہیں،اعلیٰ پولیس حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ دھرنا دینے والی جماعت کی بات سنیں،دھرنا دینے والی جماعت کے جائز مطالبات مانیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top