The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں چائنا کٹنگ، ایف آئی اے رپورٹ میں بڑے بڑے نام افشا

کراچی: ایف آئی اے کا کہنا ہے کہ کراچی میں سوک سینٹر کی تیسری منزل سے زمینوں کا تمام جعلی ریکارڈ قبضے میں لیا، جو ایک سیاسی جماعت کے کارکنوں کے استعمال میں تھا۔

ایف آئی اے نے سندھ حکومت کو تحریری جواب میں بڑے بڑے نام افشا کر دیئے، کراچی کی زمینوں کی چائنا کٹنگ کے ایم سی، کے ڈی اے اور بورڈ آف رینویو افسران کی ملی بھگت سے ہوئی۔

ایف آئی کے مطابق واٹر بورڈ کے سابق ایڈمنسٹریٹر منظور قادر کاکا زمنیوں پر قبضےمیں ملوث ہے، کے بی سی اے کےسابق ڈی جی سیف عباس، کے ڈی اے لینڈ ڈپارٹمنٹ کے ڈائریکٹرز نجم الزمان، عارف، شاکر لنگڑا، اقبال نواز، ڈی ایس پی جاوید ایم کیوایم رہنما محمدانور کے بھائی محمد احسن عرف چنوں ماموں بھی لینڈ مافیا اور چائنا کٹنگ کے دھندے میں شامل ہیں۔

ایف آئی اے کے مطابق ، سیاسی کارکن، بزنس مین اور بلڈرز قبضہ مافیا میں شامل ہیں، نورالدین خمینی، محسن شیخانی، الیاس سہگل، حماد صدیقی، انجم جمیل صدیقی، ظفر فریدی اور نعیم یوسف زئی مافیا کا حصہ ہیں۔

ایف آئی اے نے اپنے جواب میں واضح کیا ہے کہ سوک سینٹر کی تیسری منزل سے تمام جعلی اور بوگس ریکارڈ قبضے میں لیا، جو کے ڈی اے کے ریکارڈ کا حصہ نہیں، قبضے میں لیا گیا سوک سینٹر تھرڈ فلورکا ریکارڈ ایک سیاسی جماعت کے کارکنوں کےاستعمال میں تھا۔ کے ڈی اے افسران کی نشاندہی پرجعلی و بوگس ریکارڈ قبضے میں لیا گیا اور تمام تر کارروائی کے ایم سی اور کے ڈی اے حکام سے تحریری روابط کے بعد کی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں