The news is by your side.

Advertisement

کراچی پولیس کی کارروائیاں ،گرفتار ٹارگٹ کلرز کے خوفناک انکشافات

کراچی: شہر قائد کے مختلف علاقوں میں پولیس کی کارروائیاں، بینک ڈکیتوں اور ٹارگٹ کلرز سمیت چھ ملزمان کو گرفتار کرکے اسلحہ اور دستی بم برآمد کرلیا۔

ایس ایس پی اے سی ایل سی عرفان بہادر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ فیڈرل بی ایریا کے علاقے سے پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے چار ملزمان کو گرفتار کرلیا جن کے قبضے سے چھینی ہوئی گاڑیاں موٹرسائیکل اورا سلحہ برآمد ہوا۔

پولیس کے مطابق ملزمان نے دوران تفتیش اٹھارہ اگست کو گلشن اقبال میں بینک ڈکیتی کا بھی اعتراف کیا۔ ملزمان کے قبضے سے بینک ڈکیتی کے پندرہ لاکھ روپے بھی برآمد ہوئے ۔

فیڈرل بی انڈسٹریل ایریا پولیس کارروائی کرتے ہوئے سیاسی جماعت کے دو ٹارگٹ کلرز کو گرفتار کرکے اسلحہ اور دستی بم برآمد کرلیا۔

گرفتار ملزمان میں کامران عرف کامی اور عاطف شامل ہیں جنہوں نے 14 اور سات افرادکو قتل کرنے کا اعتراف کیا ہے پولیس کے مطابق ملزمان نے بیشتر ٹارگٹ کلنگ سیاسی مخالفین اور اقلیتی برادری سے تعلق رکھنے والے افراد کی کی ہے۔

پولیس کو ٹارگٹ کلر کامران نے بتایا کہ اس نےلیاری گینگ وار کے کارندے کو صابر ہوٹل اردو بازار کے قریب قتل کیا، دو افراد کو ساتھیوں کے مدد سے اغوا کرکے رنچھوڑلائن میں قتل کیا۔گھانچی پاڑا سے ایک شخص کو اغوا کے بعد قتل کیا۔ایک نوجوان جو سول اسپتال کے پاس سے اغوا کیا اور ایم اے جناح روڈ پر قتل کیا۔

ملزم عاطف انکشاف کیا کہ اس نے ساتھیوں کے ساتھ ایک نوجوان کاشف کو رنچھوڑ لائن کے اسٹاپ پر قتل کیا، رنچھوڑ لائن میں ہی موٹر سائیکل چھینے کے دوران مزاحمت پر ایک نوجوان کو مار ڈالا۔

حساس اداروں نے ایک مراسلے میں پولیس کے اہم افسران پر حملے کا خدشہ ظاہر کیا ہے، پولیس افسران میں ایس ایس پی راؤانوار، فاروق اعوان، راجہ عمر خطاب اور مظہر مشوانی شامل ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں