The news is by your side.

Advertisement

کوٹ رادھاکشن واقعے سے ملک واسلام بدنام ہوا، سراج الحق

لاہور: امیر جماعت اسلامی سراج الحق کہتے ہے کہ کوٹ رادھا کشن واقعےسےملک اوراسلام کی بدنامی ہوئی، کسی بھی فرد کو سزا خود نافذ کرنے کا اختیار نہیں ہے۔

جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ تحریک انصاف اور حکومت کو دھرنا ختم کرنے کے لیے مذاکرات کرنے چاہئیںجوڈیشل کمیشن میں ایجنسیوں کی شمولیت پر بات چیت ہوسکتی ہے۔ لاہور ہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن سے خطاب کرتے ہوئے سراج الحق کا کہنا تھا کہ جوڈیشل کمیشن کی تشکیل کے لیے سپریم کورٹ پر اعتماد مثبت پیش رفت ہے۔

سراج الحق نے کہا کہ کچھ لوگ اسلام آباد دھرنے سے لاشیں چاہتے تھے اور آئین کو ختم کرنا چاہتے تھے مگر ہماری کوششوں سے سب ناکام ہوا۔ امیر جماعت اسلامی نے کوٹ رادھا کشن واقعے کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ واقعہ پاکستان کی بدنامی کا باعث بنا جس سےدشمنوں کو پراپیگنڈہ کرنےکا موقع ملا، پاکستان کو اخلاقیات برآمد کرنا تھیں مگر اب ہمیں دہشتگردی اور پولیوبرآمد کرنے والا سمجھا جارہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کو اسلامی اور خوشحال ریاست بنانا چاہتے ہیں جہاں عام آدمی کا پارلیمنٹ میں پہنچنا مشکل ہے۔ سراج الحق کا کہنا تھا کہ پاکستان میں سیاست کو تجارت کے طور کیا جارہا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ان پڑھ لوگ وزیر تعلیم اور بسوں کے ڈارئیور اور کنڈیکٹر وزیر صحت لگادیے جاتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں