ہم نے فوج کو ثالث یا ضامن ننے کا نہیں کہا،عمران خان -
The news is by your side.

Advertisement

ہم نے فوج کو ثالث یا ضامن ننے کا نہیں کہا،عمران خان

اسلام آباد: تحریکِ انصاف کے چیئرمین عمران خان نے آزادی مارچ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے نواز شریف کا قومی اسمبلی میں دیا ہوا بیان مسترد کر دیا اور کہا کہ ہم نے فوج کو ثالث یا ضامن بننے کا نہیں کہا۔

عمران خان نے گذ شتہ روز کے واقعات کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ میں نےجنرل راحیل شریف کو کہہ دیا ہے کہ نواز شریف سے استعفیٰ سے کم کوئی بات قبول نہیں ہے۔

عمران خان نے کہا کہ آرمی چیف کو اپنے خدشات سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ نوازشریف کے ہوتے ہوئے شفاف تحقیقات نہیں ہوسکتیں، جنرل راحیل شریف نے کہا کہ وزیر اعظم استعفی پر تیار نہیں ، جواب میں عمران خان  نے کہا کہ انہیں نواز شریف پر اعتبار نہیں۔

عمران خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ نواز شریف معاہدہ کرکے باہر گئے اور جھوٹ بولتے رہے، نواز شریف نے آئی ایس آئی سے پیسے لیکر آئی جے آئی بنائی۔

عمران خان نے کہا کہ آج شام ایسا اعلان کروں گا جس سے نوازشریف کے لئے حکومت کرنا اور مشکل ہوجائےگا، عمران خان نے بتایا کہ آرمی چیف سے ملاقات کی درخواست نہیں کی، کپتان نے کہا کہ جنگ میری نہیں پاکستان کی ہے۔ مجھے خریدنے کی کوشش بھی کی گئی۔

انھوں نے کہا کہ نوازشریف کے جھوٹے وعدوں سے متعلق آرمی چیف کو آگاہ کیا، ملک کی خاطر بات چیت کا راستہ اختیارکیا۔

اس سے قبل چیئرمین عمران خان نے اپنے بیان میں وزیراعظم اور چوہدری نثار کے قومی اسمبلی میں دییے گئے بیان کو سختی سے مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ  فوج سے ثالثی کی درخواست حکومت نے کی تھی، آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے ملاقات کی درخواست ہم نے نہیں کی تھی، عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ نواز شریف ماضی میں بھی جھوٹ بولتے رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں