The news is by your side.

Advertisement

‘الحمدللہ! کچھ نہیں چھپایا’

اسلام آباد: پنجاب کے سینیئر وزیر علیم خان نے اپنی آف شور کمپنی سے متعلق بڑا دعویٰ کردیا ہے۔

پاناما لیکس کے بعد ‘پنڈورہ پیپرز’ نے پاکستانی سیاست میں تہلکہ مچادیا ہے، آئی سی آئی جے کی فہرست میں سات سو سے زائد پاکستانیوں کے نام ہیں۔

رپورٹ کے مطابق وزیرخزانہ شوکت ترین آف شور کمپنی کے مالک نکلے، اسحاق ڈار کے صاحبزادے علی ڈار، وزیراعظم کے سابق معاون خصوصی وقار مسعود کے صاحبزادے عبداللہ مسعود، وفاقی وزیر مونس الٰہی، سینیٹر فیصل واؤڈا، وزیر صنعت خسرو بختیار، پنجاب کے سینئر وزیر علیم خان سمیت دیگر کے نام شامل ہیں۔

آئی سی آئی جے کی جانب سے علیم خان کے نام آف شور کمپنی ظاہر کرنے پر پنجاب کے سینیئر وزیر علیم خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے بیان میں کہا کہ ‘الحمدللہ! کچھ نہیں چھپایا’، میری یہ آف شور کمپنی ایف بی آر میں ڈکلیئر ہے جبکہ الیکشن کمیشن کواثاثوں میں یہ کمپنی پندرہ سال سے ظاہرکررکھی ہے۔

دوسری جانب پنڈوراپیپرز میں اےآر وائی نیوزکی تحقیقاتی رپورٹنگ کا بھی ذکر کیا گیا ہے، آئی سی آئی جے کے مطابق پیپرز کےاجرا سےایک دن پہلےاے آر وائی نیوز نےزمان ٹاؤن کی خبرچلائی، جس میں کہا گیا کہ وزیراعظم عمران خان، آف شور کمپنیوں کےمالک کا ایڈریس یکساں ہے۔

آئی سی آئی جے کے مطابق اےآر وائی نیوز نےخبر میں آف شور کمپنیوں کےڈیٹابیس کاحوالہ دیا، آف شورکمپنی مالک نےعمران خان سے کسی تعلق کی تردید کی جبکہ ترجمان وزیراعظم نےبھی بتایا کہ آف شورکمپنی کےمالک کی وزیراعظم سےملاقات نہیں ہوئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں