The news is by your side.

Advertisement

دودھ کی قیمت میں کتنا اضافہ ہونے جارہا ہے؟

کراچی: شہر قائد میں ایک بار پھر کھلے دودھ کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کیا جارہا ہے۔

شہر قائد کے باسی ایک جانب کھلا اور ناقص دودھ استعمال کرنے پر مجبور ہیں تو دوسری جانب ڈیری مافیا کی جانب سے دودھ کی قیمتوں میں مسلسل اضافے کا سلسلہ جاری ہے۔

اے آر وائی نیوز کے پروگرام باخبر سویرا میں خصوصی گفتگو کرتے ہوئے صدر ڈیری اینڈ کیٹل فارمرز شاکر عمر گجر نے عذر پیش کیا کہ آئے روز دودھ کی قیمتوں میں اضافہ کیوں ہورہا ہے؟ اس کے محرکات جاننے کی کوشش کی جائے، یہ بھی معلوم کیا جائے کہ کمپنیاں بھی دودھ کہاں سےحاصل کررہی ہیں؟۔

شاکرعمر گجر نے پروگرام میں دعویٰ کیا کہ کراچی میں فروخت ہونے والا کھلا دودھ 95 فیصد خالص ہے، چند فیصد لوگ ایسے ہیں جو ملاوٹ جیسے گھناؤنے دھندے میں مصروف ہیں۔

صدر ڈیری فارم اینڈ کیٹل فارمرز نے دودھ کی قیمتوں میں اضافے کی بڑی وجہ چارے کی ایکسپورٹ کو قرار دیا اور کہا کہ حکومت چارےکی ایکسپورٹ پالیسی پر نظر ثانی کرے تاکہ ڈیری فارمز کا نیٹ وسیع پیمانے پر پھیلایا جاسکے اس حکمت عملی سے دودھ کی پیداوار بڑھے گی اور اس کی قیمتوں میں نمایاں کمی بھی ہوگی۔

شاکر عمر گجر نے ایک جانب تو کھلے دودھ کی قیمتوں میں اضافے کا عندیہ دیتے ہوئے کہا کہ رواں ماہ ہی دودھ کی قیمتیں بڑھیں گی، جتنے اخراجات آتے ہیں، ہماری کوشش ہوگی کہ فی لیٹر پر 20 روپے کا اضافہ ہو۔

واضح رہے کہ چند روز قبل وزیراعظم نے کسان کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے خبردار کیا تھا کہ مستقبل میں فوڈ سیکیورٹی ، نیشنل سیکیورٹی کا مسئلہ بن سکتا ہے۔

وزیراعظم کا اپنے خطاب میں کہنا تھا کہ ملک میں دودھ خالص نہیں مل رہا ہے، میں نے خود چیک کرایا، پتہ چلا زیادہ تر دودھ جو بیچا جارہا ہے وہ دودھ ہی نہیں ہے،ا سے مصنوعی طریقے سے بنایاجا رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں