The news is by your side.

Advertisement

شکارپور میں کتے کے کاٹے سے 10 سال کا بچہ ویکسین نہ ہونے سے جاں بحق

شکارپور: صوبہ سندھ کے ضلع شکارپور میں کتے کے کاٹے سے 10 سال کا بچہ جاں بحق ہو گیا، بچے کو کہیں بھی ویکسین نہیں مل سکی تھی۔

تفصیلات کے مطابق شکار پور میں ایک بچہ کتے کے کاٹے کی وجہ سے جاں بحق ہو گیا ہے، بچے کو تشویش ناک حالت میں سول اسپتال شکارپور لے جایا گیا لیکن اسپتال میں اینٹی ریبیز ویکیسن نہ ہونے پر بچہ دم توڑ گیا۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق متاثرہ بچے کو شہید بے نظیر بھٹو اسپتال لاڑکانہ لے جایا گیا لیکن وہاں بھی ویکسین نہ تھی، والدین بچے کو لے کر در بدر پھرتے رہے، پر ویکسین نہ ملی۔

یاد رہے کہ رواں سال 14 مئی کو بھی کراچی کے ایک اسپتال میں رے بیز کے باعث دم توڑ گیا تھا، آٹھ سالہ رضوان کا تعلق بھی شکارپور سے تھا، اس کے اہل خانہ شکارپور اور لاڑکانہ اسپتال میں اینٹی رے بیز سیرم نہ ہونے کے باعث کراچی لے آئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں:  کراچی: محکمہ صحت کی غفلت، ریبیز کا شکار ایک اوربچہ جاں بحق

اس سے چند دن قبل سانگھڑ سے تعلق رکھنے والا گیارہ سالہ لڑکا لال بخش بھی رے بیز سے جاں بحق ہو گیا تھا، اسے بھی سانگھڑ سے ایک دن قبل جناح اسپتال کراچی لایا گیا تھا، تاہم اسے بچایا نہیں جا سکا۔

یاد رہے کہ کراچی میں صرف جناح اور سول وہ سرکاری اسپتال ہیں جہاں کتے کے کاٹے کی ویکسین موجود ہوتی ہے، اس کے علاوہ کسی سرکاری اسپتال میں یہ سہولت میسر نہیں ہے۔

کراچی سمیت سندھ بھر میں آوارہ کتوں کی بہتات ہے جس سے شہریوں کو شدید پریشانی لاحق ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں