The news is by your side.

Advertisement

100 فٹ بلند لہر پر سرفنگ کرنے کا خطرناک ریکارڈ

پرتگال کے 19 سالہ طالب علم انتونیولا رینو نے اکتوبر 2020 میں 100 فٹ سے زائد بلند لہر پر سرفنگ کر کے نیا ریکارڈ قائم کرنے کا دعوی کیا تھا۔

انتونیو کا کہنا تھا کہ انہوں نے پرتگال کے ساحل نزارے پر اب تک کی سب سے بڑی لہر پر سرفنگ کی ہے۔

انہوں نے کہا تھا کہ اس لہر کی بلندی تقریباً 101 فٹ تھی اور انہوں نے 80 فٹ بلند لہر پر سرفنگ کے موجودہ ریکارڈ کو توڑ دیا ہے، تاہم ان کے اس دعوے کی تصدیق نہیں کی جاسکی تھی۔

اب تقریباً ڈیڑھ سال بعد خلائی تحقیق کے امریکی ادارے ناسا کی جانب سے لی گئیں سیٹلائٹ تصاویر نے انتونیو کے اس دعوے کی تصدیق کردی ہے۔

زمین کی مانیٹرنگ کے لیے مدارمیں بھیجے گئے ناسا اورامریکی جیولوجیکل سروے کے مشترکہ خلائی جہاز لینڈ سیٹ 8 کی جانب سے بھیجی گئی سیٹلائٹ سے ظاہر ہوتا ہے کہ سنہ 2020 میں نزارے پر بلند لہروں کی وجہ سے بہت زیادہ توانائی خارج ہوئی تھی۔

یونیورسٹی آف پورٹو کے اوشیانو گرافر جوز ڈے سلوا کا اس بارے میں کہنا ہے کہ ناسا کی 2020 کی سیٹلائٹ تصاویر سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس سال اکتوبر میں نزارے کے ساحل کے نزدیک اب تک کی بلند ترین لہریں پیدا ہوئی تھی۔

29 اکتوبر 2020 کے اعداد و شمار سے بھی ظاہر ہوتا ہے کہ ساحل پر لہروں کی بلندی 17 سیکنڈ تک 20 فٹ سے زائد رہی تھی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ناسا کی ان تصاویر سے بھی اس بات کی توثیق ہوتی ہے کہ 29 اکتوبر کو انتونیو نے سرفر روڈریگو کوگزا کا ریکارڈ توڑ دیا ہے، روڈ ریگو نے یہ عالمی ریکارڈ 2017 میں 80 فٹ بلند لہر پر سرفنگ کر کے قائم کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں