The news is by your side.

Advertisement

ریاض، شاہی فرمان کے خلاف مظاہرہ، 11 شہزادے گرفتار، جیل منتقل

ریاض : سعودیہ عرب میں مزید 11 شہزادوں کو حراست میں لے کر ہائی سیکیورٹی زون منتقل کردیا گیا ہے۔

اس بات کا انکشاف سعودیہ عرب کی نیوز ویب سائٹ ’سبق‘ نے کیا، نیوز ویب سائٹ کے مطابق گرفتار کیے گئے شہزادے حکومتی اقدامات کے خلاف مظاہرہ کر رہے تھے۔

ذرائع کے مطابق حراست میں لیے گئے شہزادے ریاض کے تاریخی اور مخصوص سرکاری علاقے میں جمع ہوئے تھے جہاں وہ اُس شاہی فرمان کے خلاف مظاہرہ کر رہے تھے جس کے تحت شاہی خاندان کو یوٹیلیٹی بلز کی مد میں ملنے والے الاؤنسز بند کر دیئے گئے تھے۔

مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ شاہی خاندان کے تمام افراد کے یو ٹیلیٹی بلز حکومت ادا کیا کرتی تھی لیکن اب ایک فرمان کے ذریعے اس پر پابندی عائد کردی گئی ہے جس پر اپنا احتجاج ریکارڈ کرانا چاہتے تھے۔

تاہم مظاہرے کی اطلاع ملتے ہی سعودی فورسز نے 11 شہزادوں کو گرفتار کر کے جنوبی ریاض میں واقع ہائی سیکیورٹی زون کے ہائیر قید خانے میں منتقل کردیا ہے جہاں مزید قانونی چارہ جوئی عمل میں لائی جائے گی۔

یاد رہے اس قبل کرپشن کے خلاف مہم کے دوران شہزادے طلال بن ولید سمیت کئی شہزادوں اور سرکاری حکام کو پہلے ہی حراست میں لیا جاچکا ہے جہاں اُن سے اثاثہ جات سے متعلق پوچھ گچھ کا عمل جاری ہے۔

خیال رہے کہ ولی عہد محمد بن سلیمان سعودی عرب میں وژن 2023 کے تحت سخت معاشی اقدامات کے ذریعے انقلابی تبدیلیاں لائے ہیں جس میں خود انحصاری کو اولین ترجیح دی گئی ہے جب کہ شاہی خاندان کو حاصل مراعات میں کٹوتی بھی اسی سلسلے کی کڑی ہے اور حال ہی میں ویلیو ایڈڈ ٹیکس کا نفاذ بھی کیا گیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں