The news is by your side.

صرف متحدہ عرب امارات میں 1115 پاکستانیوں کے اثاثے ہیں، رپورٹ

اسلام آباد : کس کس پاکستانی نے کتنے کتنے اثاثے بیرون ملک بنا رکھے ہیں، ایف آئی اےنے چونکا دینے والے نئی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی، جس میں میں انکشاف کیا گیا ہے کہ صرف یو اےای میں ایک ہزار ایک سو پندرہ پاکستانیوں کےاثاثےہیں۔

تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے نے بیرون ملک اکاؤنٹس اوراثاثوں سے متعلق کیس میں نئی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی، جس میں بتایا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات میں 1115 پاکستانیوں کے اثاثےہیں، جن میں پنجاب کے338،سندھ 639لو گ شامل ہیں جبکہ اسلام آباد115،بلوچستان کے5اورکےپی کے18لوگ اثاثے رکھتے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا کہ 1115 میں سے 417افراد نے ایمنسٹی اسکیم سے فائدہ اٹھایا ہے، جن میں پنجاب کے117،سندھ کے267، اسلام آباد سے29 افراد شامل ہیں جبکہ 162 افراد نے ایف آئی اے کی تحقیقات میں اثاثے ظاہر کیے، جن میں پنجاب کے 70، سندھ کے 72،اسلام آباد کے 14، بلوچستان کے2 اور کے پی کے 4 افراد شامل ہیں۔

ایف آئی اے رپورٹ کے مطابق بیرون ملک اثاثے رکھنے والے77 افراد نے ٹیکس ریٹرن جمع کرائیں، جن میں پنجاب سے8 ،سندھ سے 37،اسلام آباد سے 29 ، بلوچستان سے 2 اور کے پی سے ایک شخص شامل ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ تحقیقات میں90افرادنےیواےای میں جائیدادسےلاتعلقی کااظہارکیا، جس میں پنجاب سے 29،سندھ سے57،اسلام آبادسے ایک اور کے پی سے 3 افراد شامل ہیں۔

ایف آئی اے کے مطابق 775 افراد نے ایف آئی اے کے پاس بیان حلفی جمع کرائے، 351افراد کے بیان حلفی آنا باقی ہیں جبکہ رپورٹ میں شکایت کی ہے کہ اٹھارہ افرادتعاون نہیں کررہے، جبکہ ایک مفروراورتریسٹھ افراد کی شناخت نہیں ہوسکی۔

مزید پڑھیں : پاکستان کے 35 سیاستدان دبئی میں جائیداد کے مالک نکلے ،رپورٹ

اس سے قبل 17 نومبر کو بھی ایف آئی اے نے دبئی میں پاکستانیوں کی جائیدادوں سے متعلق عبوری رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش کی تھی، جس میں بتایا گیا تھا دبئی میں جائیدادیں رکھنےوالے پاکستانیوں کی تعداد895 ہے، تین سو چوہتر نے ایمنسٹی اسکیم کےتحت جائیداد ظاہرکی جبکہ پاکستان کے35 سیاستدان دبئی جائیدادوں کے مالک ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا تھا 69 پاکستانیوں نے سالانہ ٹیکس ریٹرنزمیں دبئی کی جائیدادیں ظاہرکیں جبکہ 72 پاکستانیوں نے دبئی جائیدادیں تسلیم کرنے سے انکار کیا اور 220 پاکستانیوں نے دبئی جائیدادوں سےمتعلق بیان حلفی جمع نہیں کرایا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں