The news is by your side.

Advertisement

پنجاب بھر میں 13000 سے زائد والدین کا بچوں کو پولیو ویکسین پلانے سے انکار

لاہور : پنجاب بھر میں 13000 سے زائد والدین نے بچوں کوپولیو ویکسین  پلانے سے انکار کر دیا،سلمان غنی کا کہنا ہے ملک بھر میں پولیو  وائرس کی موجودگی کی وجہ سے ہر بچہ خطرے میں ہے، رہ جانے والے بچوں کو آنے والے دنوں میں پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق پشاور میں میں افواہ کی وجہ سے پنجاب میں پولیو مہم کو شدید نقصان پہنچا، پنجاب بھر میں 13000 سے زائد والدین نے بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانے سے انکار کر دیا۔

کوآرڈینیٹرایمرجنسی آپریشن سینٹرز برائے انسداد پولیو سلمان غنی نے کہا تیرہ ہزار میں سے 5 ہزار والدین کو ٹیموں نے بات چیت کے ذریعے کائل کیا اور حفاظتی قطروں کی خوراک پلائی۔

سلمان غنی کا کہنا تھا پہلے دو روز میں ایک کروڑ 30 لاکھ بچوں کو قطرے پلائے گئے، زیادہ تر والدین نے پشاور میں افواہ کی وجہ سے بچوں کو پولیو کے قطرے نہیں پلائے۔

انھوں نے کہا راولپنڈی میں سب سے زیادہ 5600 والدین قطرے پینے سے انکار کیا، جبکہ لاہور اور اٹک میں بلترتیب 600 اور 500 والدین بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانے سے انکاری ہیں، رہ جانے والے بچوں کو آنے والے دنوں میں پولیو سے بچاو کے قطرے پلائے جائیں گے۔

مزید پڑھیں : پشاور میں انسدادپولیومہم بدنام کرنے کی سازش کرنے والا شخص گرفتار

کوآرڈینیٹرایمرجنسی آپریشن سینٹرز برائے انسداد پولیو کا کہنا تھا والدین اپنے بچوں کو بلا فکر پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائیں، ملک بھر میں پولیو وائرس کی موجودگی کی وجہ سے ہر بچہ خطرے میں ہے، بار بار پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلانے سے بچے کو مکمل تحفظ فراہم ہوتا ہے اور اس خو پلانے سے کوئی نقصان نہیں۔

یاد رہے پشاورمیں دو روز قبل پولیو ویکسی نیشن سےبچوں کی حالت غیر ہونےکی افواہوں نےکھلبلی مچادی تھی، جس کےبعدمشتعل افراد نےسرکاری مرکز صحت ماشو خیل پر دھاوا بول دیا تھا۔

ناقص ویکسین فلاپ ڈرامے کا ڈراپ سین سوشل میڈیا پر وائرل ہوا ، جس میں دیکھاجاسکتاہےکہ ایک شخص بچوں کوزبردستی بسترپر لٹاکر بے ہوشی کاڈرامہ رچا رہا ہے لیکن بچے تندرست دکھائی دے رہے تھے۔

بعد ازاں پشاورمیں پولیس نے بچوں سے بےہوشی کا ڈرامہ کرانے والے ملزم کو گرفتار کرلیا تھا ، عدالت نے ملزم کو ایک روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں