The news is by your side.

Advertisement

افغانستان میں علمائے کرام کے اجلاس میں دھماکہ، 14 افراد جاں بحق

کابل: افغانستان کے دارالحکومت کابل میں علمائے کرام کے اجلاس میں دھماکے کے نتیجے میں 14 افراد جاں بحق، 19 زخمی ہوگئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق کابل میں علماء مشائخ کے اجلاس کے باہر زور دار خودکش دھماکہ ہوا جس کے نتیجے میں 14 افراد جاں بحق ہوگئے جبکہ 19 زخمی ہیں۔

دھماکے کے فوری بعد سیکیورٹی ادارے اور ایمبولینس جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں، خودکش دھماکے میں زخمی ہونے والوں کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا، زخمیوں کی حالت تشویشناک بتائی جارہی ہے۔

افغان وزارت داخلہ نے دھماکے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ دھماکہ اُس وقت ہوا جب علماء کرام کا اجلاس ختم ہوچکا تھا اور وہ گھر جاچکے تھے۔

جاں بحق اور زخمی ہونے والے افراد کی شناخت کا عمل جاری ہے، سیکیورٹی فورسز نے جائے وقوعہ پر پہنچ کر تحقیقات کا آغاز کردیا ہے، دھماکے کی نوعیت کا تعین نہیں جاسکا ہے۔

دھماکے سے کچھ دیر قبل ہی 2 ہزار کے قریب علماء کرام اجلاس میں شریک تھے، علماء کرام نے افغانستان میں حکومت کے خلاف جاری جنگ کو غیر شرعی قرار دیتے ہوئے حکومت کے خلاف ہتھیار اُٹھانے والوں کو شرپسند قرار دیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں: کابل میں خودکش دھماکہ‘26 افراد جاں بحق 18 زخمی


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں