The news is by your side.

Advertisement

لاہور، جوہر ٹاؤن میں 14 سالہ لڑکے سے اغوا کے بعد مبینہ زیادتی

لاہور: جوہر ٹاؤن کے علاقے سے پانچویں جماعت کا طالب علم 14 سالہ بچہ اغوا کے بعد مبینہ زیادتی کا شکار ہوگیا۔

تفصیلات کے مطابق جوہر ٹاؤن کے علاقے سے پانچویں جماعت کے طالب علم 14 سالہ بچے کو اغوا کے بعد مبینہ زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، واقعہ کا مقدمہ جوہر ٹاؤن میں متاثرہ بچے عادل کے والد عبدالرشید کی مدعیت میں اغوا کی دفعات کے تحت درج کرلیا گیا۔

متاثرہ بچے کے والد عبدالرشید نے الزام عائد کیا ہے کہ ان کے بیٹے کو تین نامعلوم افراد نے اغوا کیا، زیادتی اور تشدد کرکے 12 روز بعد جوہر ٹاؤن چھوڑ گئے۔

متاثرہ بچے عادل کا کہنا ہے کہ تینوں اغوا کار اسے ایک کوارٹر میں لے گئے اور زیادتی اور تشدد کا نشانہ بناتے رہے۔

مزید پڑھیں: فیصل آباد: دودھ فروش کے ہاتھوں دوسری جماعت کی طالبہ زیادتی کے بعد قتل

بچے کے والد عبدالرشید کا کہنا ہے کہ اغوا کاروں نے پیسوں کے مطالبے کے لیے اس کے بھانجے سے رابطہ کیا جب وہ موقع پر پہنچا تو ملزمان نے اس کی موٹر سائیکل اور پیسے چھین لیے اور اسے بھی تشدد کا نشانہ بناکر فرار ہوگئے۔

عبدالرشید کے مطابق پولیس بدفعلی کا مقدمہ درج نہیں کررہی اور اغوا کاروں سے صلح کرنے کے لیے دباؤ ڈال رہی ہے، ہماری شنوائی نہیں ہورہی ہے۔

متاثرہ 14 سالہ لڑکے عادل نے وزیراعظم عمران خان سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس واقعے کا نوٹس لیں اور انہیں انصاف فراہم کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں