The news is by your side.

Advertisement

ترکی کی مدد کو آنے والا روسی طیارہ حادثے کا شکار

انقرہ: ترکی میں آگ بجھانےکیلئےآنے والا روسی طیارہ حادثے کا شکار ہوگیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق ترکی میں آگ بجھانے کیلئے آیا روسی فائر فائٹنگ طیارہ بی ای ٹو ہنڈرڈکریش کرگیا، طیارے میں آٹھ رکنی عملہ سوار تھا، جس میں پانچ روسی اور تین ترکش شہری شامل تھے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق روسی طیارہ ترکی کے جنگلات میں لگی آگ بجھانے کیلئے پانی بھر کر اُڑا لیکن مطلوبہ اونچائی تک پہنچنے سے پہلے ہی گرگیا، طیارے کی کریشن ہونے کی ویڈیو منظر عام پر آگئی ہے، ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ طیارہ نے جنگل میں پانی پھینکا پھر چٹانوں پرگرگیا ،اسی دوران مذکورہ علاقے سے کالے دھواں اٹھنے لگا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق عملے کے بارے میں فوری طور پر کوئی معلومات نہیں حاصل ہوسکی ہیں۔

یاد رہے کہ ترکی کے ایجیئن اور بحیرہ روم کے ساحل پر موجود سترہ صوبوں کے جنگلات میں آگ لگی ہوئی ہے، آگ کے لپیٹ میں آنے کے خدشے پر انطالیہ کے اٹھارہ گاؤں اور اضلاع خالی کرائے جاچکے ہیں جبکہ آدانا اور مرسین میں سولہ علاقوں سے لوگوں نے انخلا کردیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: خوفناک آتشزدگی کے پیچھے سازش؟ ترک صدر کا بڑا دعویٰ

ترک صدر رجب طیب اردوان نے ملک میں آگ لگنے کے واقعات میں ممکنہ سازش پر برہمی کا اظہار کیا تھا، رجب طیب اردوان نے متاثرہ علاقوں کے دورے کیے، اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ اشارے ملے ہیں کہ آگ لگنے کے واقعات کے پیچھے کوئی سازش ہے۔

ترک صدر نے کہا کہ اگر یہ ثابت ہوا کہ آگ جان بوجھ کر لگائی گئی ہے تو سازشی عناصر کا سینہ چیر دیں گے، چاہے اس کی کچھ بھی قیمت دینا پڑے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں